زینب کے قاتل وحشی درندوں کوسرعام پھانسی دی جائے،باسط شاہ
  11  جنوری‬‮  2018     |     یورپ

اولڈہم (محمد فیاض بشیر) پاکستان جو مذہب اسلام کے نام پر معرض وجود میں آیا اسلامی تعلیمات سے دوری کی وجہ سے معاشرتی برائیوں کے چنگل میں پھنس چکا ہے اس کی بنیادی وجہ دوہرا نظام عدل و انصاف اور اشرافیہ کی عوامی خدمت کی بجائے ذاتیاتی کے تحفظ اور لوٹ مار کرکے تجوریاں بھرنا ہے تمام محکمہ جات کو لوٹ مار میں لگا دیا گیا ہے اور عوام کی جان و مال کا تحفظ غیر یقینی صورتحال سے دوچار ہے۔ لاہور کے علاقہ قصور میں سات سالہ ننھی منی جان زینب کو اغواء کرکے جنسی تشدد کا نشانہ بنایا گیا اور پھر سفاک درندہ صفت شخص نے قتل کرکے لاش کچرے کے ڈھیر میں پھینک دی انسانیت کی اس سے بڑھ کر اور کیا توہین ہوسکتی ہے ہمارا پاکستانی معاشرہ پستی کی جانب گامزن ہے اس دلخراش واقعہ نے راتوں کی نیند اڑا دی ہے اور دن کو چین میسر نہیں ہے۔ یہ فرط جذبات سے لبریز باتیں تحریک انصاف برطانیہ کے جنرل سیکرٹری سید باسط شاہ مشوانی نے میڈیا کو دیئے گئے اپنے ایک بیان میں کیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس سے بڑی ستم ظریفی یہ ہے کہ جب اس انتہائی ناقابل برداشت دل سوز واقعہ کے بعد قصور بھر کی عوام نے صدائے احتجاج بلند کی تو پولیس کی جانب سے فائرنگ کرکے دو افراد کو شہید کردیا گیا صوبہ پنجاب کی انتظامیہ اور حکومت پہلے ہی صوبہ بھر میں ظلم کی انتہا کرچکی ہے انہیں فی الفور مستعفی ہونا چاہئے عوامی نمائندگی کا اخلاقی و قانونی جواز کھوچکے ہیں۔ انہوں نے کہا تحریک انصاف برطانیہ والدین کے ساتھ دلی اظہار ہمدردی کرتے ہوئے مطالبہ کرتی ہے کہ وحشی درندے کو جلد از جلد پکڑ کر قانون کے مطابق سرعام پھانسی دی جائے تاکہ دوسروں کے لئے عبرت کا مقام ہو۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved