پیپلزپارٹی ورکرزایکشن کمیٹی کی نامزدگیاں غیرقانونی ہیں،راجہ اعظم
  11  جنوری‬‮  2018     |     یورپ

ہائی ویکمب (مسرت اقبال) پاکستان پیپلز پارٹی ورکر ایکشن کمیٹی یو کے کے کنونیئر راجہ اعظم ایڈووکیٹ نے یو کے کی تنظیم نو پر زبردست تنقید کرتے ہوئے کہا کہ یہ لوگ پارٹی کے عہدوں پر نامزدگی نہیں کرسکتے کیونکہ ان کی اپنی باڈی مکمل نہیں ہے جو بھی نامزدگیاں ہوئی ہیں وہ غیر قانونی ہیں سراسر پارٹی آئین کی خلاف ورزی ہے۔ کارکنوں کو ورغلانے کی ایک سازش ہورہی ہے جس کا ہم بھرپور مقابلہ کریں گے ان لوگوں نے ماضی میں بھی پیپلز پارٹی یو کے کے خلاف سازشیں کی تھیں اور متوازی پارٹی کا قیام عمل میں لایا تھا۔ عین اس وقت جب پاکستان میں الیکشن ہورہے تھے آج بھی چور دروازے سے آئے ہیں اور پیپلز پارٹی کو نقصان پہنچانے کی بھرپور کوشش ہورہی ہے ان کی تقرریوں سے اور تحریروں سے کارکنوں کو پارٹی سے دور کرنے کی کوشش لگتی ہے جو انشاء اﷲ تعالیٰ ورکر ایکشن کمیٹی کامیاب نہیں ہونے دے گی۔ سینئر وائس صدر اور ڈپٹی سیکرٹری کے استعفوں کے بعد پارٹی کے عہدوں پر نامزدگی کا کوئی جواز نہیں بنتا راجہ امجد اور راجہ فضل الرحمن نے کارکنوں کے ساتھ شانہ بشانہ جدوجہد کا جو فیصلہ کیا ہے اس فیصلہ پر ہم خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔ ان کی قربانیاں جو پارٹی کیلئے دی گئی ہیں وہ کبھی بھی رائیگاں نہیں جائیں گی۔ آخر میں راجہ اعظم ایڈووکیٹ نے چیئرمین بلاول بھٹو کا شکریہ ادا کیا کہ انہوں نے ورکر ایکشن کمیٹی کے تحفظات پر دو رکنی کمیٹی بنائی ہے جو چیئرمین کو اپنی رپورٹ پیش کرینگے۔ ہم سابق وزیراعظم راجہ پرویز اشرف اور سابق چیئرمین سینٹ سید نیئر بخاری کو خوش آمدید کہتے ہیں جو کمیٹی کے رکن ہیں۔ کارکنوں سے گزارش ہے کہ وہ اپنی صفوں میں اتحاد رکھتے ہوئے الیکشن کی تیاری کریں تاکہ پارٹی کے اندر جمہوریت قائم ہوسکے اور جمہوری لوگوں کو پارٹی کی قیادت کرنے کا حق دیا جائے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved