جمعہ‬‮   19   جنوری‬‮   2018
معصوم کلی مسلنے والوں کیخلاف موثرکارروائی ہونی چاہیے،مولاناعبدالاعلیٰ
  12  جنوری‬‮  2018     |     یورپ

بریڈفورڈ(پ۔ر) مرکزی جمعیت اہل حدیث برطانیہ کے سیکرٹری اطلاعات مولانا عبدالاعلی درانی نے قصورمیں معصوم کلی کو مسلنے والے قاتلوں اور و درندوںکے خلاف فوری اور موثرکارروائی کرنے کامطالبہ کرتے ہوئے کہااسلام میں ایسے درندوں کیلئے بڑی مناسب سزائیں تجویزکی گئی ہیں جودوسروں کے لیے باعث عبرت بن جاتی ہیں ،بڑے شرم کی بات ہے اللہ و رسول کے نام پر بننے والے ملک میں ستر سال سے اسلامی حدود نافذ نہیں کی گئیں انہوں نے کہااسلامی سزائیں وحشیانہ نہیں وحشیوں کیلئے ہیں تاکہ معاشرہ اس قسم کے خون رلادینے والے واقعات و حادثات سے بچا رہے ، جو لوگ حدود اللہ کے نفاذ کوبرابھلا کہتے ہیں وہ دراصل مجرموں کے عمل کی کراہتوں سے متاثر نہیں ہوتے، مولاناعبدالاعلیٰ نے کہاحکومت کوئی بھی ہو کسی سیاسی جماعت کو لیکن حدود اللہ کااحترام تو ایک مسلمان کی حیثیت سے سب کافرض ہے کم ازکم اسلامی نظام کے نفاذ کااہتمام کرناچاہیے تھا جس سے ہمارا معاشرہ تو محفوظ ہوسکتادوسرااس قسم کے واقعات کا بڑے تین اسباب ہیں، میڈیا کی بے راہروی ،عوام کی لاعلمی اورحکمران کی اپنے فرائض سے بے خبری ۔میڈیا کو کنٹرول کرنے والا پیمراجو میڈیا پر نظر نہیں رکھتا کہ وہ کس قسم کے بیہودہ پروگرام کررہے ، خواتین بے پردہ اور مکمل فیشن کے ساتھ سرعام آتی ہیں ، ٹیلی ویژن پر اصلاحی پروگرام نہیں ہوتا صرف موسیقی اور ناچ گانوں سے جنسی انارکی پھیلائی جارہی ہے اور کوئی یہ نہیں کہہ سکتاکہ ان ڈراموں فلموں میں کوئی اخلاقی پہلو اجاگرنہیں کیاجاتاجس سے ہمارا معاشرہ تعفن زدہ ہوگیاہے ، روپے پیسے کے لالچ نے بڑے بڑے مالداروں اور اسمبلی ارکان کوجنسی وڈیو بنانے کادیوانہ بنادیاگیا اور حکومت نے قصور ہی میں پکڑے گئے سات مجرموں میں سے صرف دو کو معمولی سی سزا دی ہے ۔ اگر اس قسم کے واقعات کا موثر نوٹس لیا جاتاتویہ حالیہ المناک حادثہ پیش نہ آتا۔ مولاناعبدالاعلیٰ نے کہاقوم کو ایسی قیادت کی ضرورت ہے جوعوام کووعظ و نصیحت بھی کرے کیونکہ عام واعظ اور حکمران کے وعظ میں زمین و آسمان کا فرق ہے لیکن بدقسمتی سے صدر ضیاء الحق مرحوم کے علاوہ کسی حکمران نے یہ فرض نہیں نبھایاان کے دور میں ایسے واقعات کا سخت ایکشن لیا جاتاتھا اور سزائیں سرعام دی جاتی تھیں ، اب کتنے عرصے سے ہم دہشت گردی کاشکارہیں لیکن کسی مجرم کو سرعام سزا نہیں دی گئی جب تک ایسا نہیں ہوگاہمارا معاشرہ جرائم سے پاک نہیں ہوسکتا بیان کے آخرمیں مولاناعبدالاعلیٰ نے وزیر اعلی پنجاب سے مجرمین کی فوری گرفتاری اور ان کے خلاف عبرتناک سزا سرعام دینے مطالبہ کیاہے ۔اور معصوم بچی کے والدین اور لواحقین کیلئے دعائے صبرواستقامت کرتے ہوئے کہاکہ مومن کو ہر مصیبت میں اجر ملتا ہے ۔اس معصومہ بچی کے مجرم عبرتناک سزاسے نہیں بچ سکیں گے ۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved