برسلز،یوم یکجہتی کشمیرکی تقریب،نغمانہ ہاشمی کاکشمیریوں کی حمایت کاعزم
  7  فروری‬‮  2018     |     یورپ

برسلز( او صا ف نیو ز )بلجیم، یورپی یونین اور لکسمبرگ کے لئے پاکستان کی سفیر محترمہ نغمانہ اے ہاشمی نے کشمیری عوام کے حق خودارادیت کے منصفانہ مقصد کے لئے اخلاقی، سیاسی و سفارتی حمایت جاری رکھنے کے پاکستانی موقف کا اعادہ کیا ہے۔ وہ یہاں پاکستانی سفارتخانے کی جانب سے منعقد کی گئی ایک تقریب سے خطاب کر رہی تھیں۔ تقریب میں پاکستانی اور بلجیم کی کمیونٹی کے ارکان نے پورے جوش وخروش کے ساتھ شرکت کی جس کا اہتمام 5 فروری کو بھارتی مقبوضہ کشمیر کے معصوم لوگوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لئے کیا گیا تھا۔ نمایاں مقررین میں پاکستانی سفیر محترمہ نغمانہ اے ہاشمی کے علاوہ پروفیسر الیگزانڈرے تھیس، صحافی انیتا بولاندی، ایمن اوزکارہ، نائب صدر برسلز پارلیمنٹ، حسن کویونچو، رکن برسلز پارلیمنٹ، ڈاکٹر منظور ظہور، رکن برسلز پارلیمنٹ اور کونسلر شازیہ منظور شامل تھیں۔ یورپی پارلیمنٹ کے متعدد ارکان تقریب میں شرکت کرنا چاہتے تھے لیکن وہ سٹراسبرگ میں پارلیمنٹ کے اجلاس کے باعث شریک نہ ہو پائے لہٰذا انہوں نے اپنے ریکارڈ شدہ پیغامات بھجوائے۔ پیغامات بھجوانے والوں میں ایم ای پی جولی وارڈ، ایم ای پی جین لیمبرٹ، ایم ای پی امجد بشیر اور ایم ای پی واجد خان شامل تھے۔ مقررین نے بھارتی مقبوضہ کشمیر کے عوام کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کیا اور بھارتی قابض فورسز کی جانب سے ڈھائے جانے والے مظالم کی مذمت کی اور بالخصوص پیلٹ بندوقوں کے غیرقانونی استعمال اور کشمیری عوام کی تحریک آزادی کو دبانے کے ہتھیار کے طور پر ریپ کے استعمال کو اجاگر کیا۔ پاکستان کی وزارت اطلاعات، نشریات و قومی ورثہ کی جانب سے کشمیر پر بنایا گیا خصوصی نغمہ اور دستاویزی فلم بھی دکھائی گئی جبکہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر ایک پریزنٹیشن بھی دی گئی۔ بھارتی قابض فورسز کے ہاتھوں کشمیری عوام کے لئے پیدا ہونے والی مشکلات کی منظرکشی کے لئے تصاویر اور پوسٹرز کی ایک نمائش کا اہتمام بھی کیا گیا۔ گزشتہ سات دہائیوں سے قابض بھارتی فورسز کی طرف سے کئے جانے والے جرائم کے باعث مشکلات کا شکار کشمیری عوام کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لئے 4 فروری کو کشمیر کونسل یورپ کی جانب سے شمعیں روشن کی گئیں۔ اس موقع پر زندگی کے تمام شعبوں سے تعلق رکھنے والے لوگوں کی ایک بڑی تعداد موجود تھی۔ مقررین نے بھارتی مقبوضہ کشمیر میں معصوم شہریوں پر تشدد کے علاوہ رہنمائوں اور سیاسی کارکنوں کو حراست میں رکھنے کی مذمت کی۔ شرکاء کا کہنا تھا کہ کشمیری عوام بھارتی قبضے سے آزادی تک اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے۔ انہوں نے یورپی یونین پر زور دیا کہ وہ مسئلے کے پرامن حل کے لئے اپنا کردار ادا کرے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved