حکومتی پالیسیوں سے مسئلہ کشمیرکونقصان پہنچا،حافظ ادریس
  7  فروری‬‮  2018     |     یورپ

برمنگھم(پ ر) پاکستان رابطہ کونسل برطانیہ کے جنرل سکریٹری حافظ محمد ادریس نے کہا ہے کہ 5 فروری کا دن تحریک آزادی کشمیر میں ایک تاریخی دن ہے مرحوم قاضی حسین احمد نے اس دن کا آغاز کر کے پوری پاکستانی قوم کو کشمیریوں کی پشت پر لا کھڑا کر دیا یہ دن ہر سال پوری دنیا میں منایا جاتا ہے مگرپاکستان میں مختلف موقعوں پر اقتدار میں آنے والی حکومتوں کی پالیسی اور کردار وہ نہیں جس کا تقاضہ یہ دن کرتا ہے پاکستان کے حکمرانوں نے مسئلہ کشمیر کو ترجیح دینے کی بجائے بھارت کے ساتھ تجارتی تعلقات کو اولیت دی آصف زرداری نے بھارت کو پسندیدہ ملک قرار دیا میاں نواز شریف اور عمران خان چوری چوری نریندر مودی سے ملاقاتیں کرتے ہیں مودی کو ناراض کرنے کے لیے تیار نہیں ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ اسلام آباد کی پالیسیوں نے مسئلہ کشمیر کو سیاسی اور سفارتی محاذ پر شدید نقصان پہنچایا ہے دنیا جب کشمیریوں کے وکیل پاکستان کی کارکردگی پر نظر ڈالتی ہے تو وہ مسئلہ کشمیر بھارت اور پاکستان کے درمیان تنازعہ قرار دے کر جان چھڑا لیتے ہیں اور مداخلت کرنے سے گریز کرتے ہیں پاکستان جب بھارت کے ساتھ تعلقات بگاڑنے کے تیار نہیں تو دنیا کو کیا چٹ پڑی ہے کہ وہ بھارت کو ناراض کریں۔ حافظ ادریس نے کہا کہ میاں نوز شریف5 فروری کو مظفرآباد گے وہاں وہ اپنی نا اہلی کا رونا روتے رہے کہ پاکستان میں وہ نا اہل قراردیا گیا آزاد کشمیر میں انہیں کوئی کام دیا جائے یہ پاکستان کے قومی لیڈروں کی سوچ ہے اس سے بین القوامی برادری کو کیا پیغام دیا جا رہا ہے کہ وہ کشمیریوں کی حمائت کے لیے بھارت پر دبائو ڈالیں کہ وہ مسئلہ کشمیر کو حل کرنے کے پاکستان کے ساتھ مذاکرات کرئے حکمران یہ چاہتے ہیں کہ مسئلہ کشمیر اسی طرح التوا میں پڑا رہے تا وہ کشمیر پر سیاست کرتے رہیں ۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز


یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved