آزادعدلیہ اورججوں کوتنہانہ سمجھاجائے،ہیومن رائٹس موومنٹ
  16  اپریل‬‮  2018     |     یورپ

بر سٹل(پ ر ) ہیومن رائٹس موومنٹ انٹرنیشنل کے ر ہنما ئو ںمحمدناصراقبال خان، ر ا نا بشا ر ت علی خان ، میاں محمدسعید کھوکھرایڈووکیٹ ، محمدرضاایڈووکیٹ ،تنویرخان، محمداشرف عاصمی ایڈووکیٹ، ندیم اشرف ،سلمان پرویز،روحی کھوکھرایڈووکیٹ ، ناصرچوہان ایڈووکیٹ ، ممتازاعوان ،محمدشاہدمحمود ، محمدیونس ملک ،نیویارک محمد جمیل گوندل، سرفرازخان نیازی، یونس میمن ، راناشہزادٹیپو ،دندیم مصطفی اوررمیاں اویس علی نے کہا ہے کہ انصاف کے ڈرسے شرپسندوں نے منصف کوڈرایا مگر کسی مجرم کازراورزوراسے احتساب سے نہیں بچاسکتا۔ گالیاں اورگولیاں انصاف پراثراندازنہیں ہوں گی۔آزاد،منظم اورمتحرک عدلیہ ریاست ،سیاست ،صحافت ،جمہوریت،معاشرت اورمعیشت کے مفادمیں ہے۔عدلیہ اورججوں کامیڈیاٹرائل کرنیوالے حدسے تجاوزنہ کریں۔آزادعدلیہ کے ہرایک باضمیر منصف نے کسی دبائومیں آئے بغیر انصاف کی فراہمی اورفراوانی کابیڑہ اٹھایا ہے ۔عدالت عظمیٰ کے جج جسٹس اعجاالاحسن کی رہائشگاہ پرفائرنگ قابل مذمت ہے،ہیومن رائٹس موومنٹ کے ارکان سراپااحتجاج ہیں۔پاکستان کی آزادعدلیہ اورججوں کوتنہایاکمزور نہ سمجھاجائے ۔پاکستان کے عوام آج بھی آزادعدلیہ سمیت ریاستی اداروں کی پشت پرکھڑے ہیں۔ ا ن ر ہنما ئو ں نے مزید کہا کہ عدالت عظمیٰ بارایسوسی ایشن کی منتخب قیادت کی طرف سے جسٹس اعجاالاحسن کی رہائشگاہ پرفائرنگ کیخلاف آج عدالتی بائیکاٹ کافیصلہ درست ہے ،ہم اس اقدام کی بھرپور حمایت کرتے ہیں۔فائرنگ میں ملوث شرپسندعناصر اوراس واقعہ کے ماسٹر مائنڈ کوبے نقاب کرکے قرارواقعی سزادی جائے ۔انہوں نے کہا کہ ججوں اور عدالت پرحملے درحقیقت ریاست اورقومی ضمیر پرحملے کے مترادف ہیں۔ پاکستان سمیت دنیا کاکوئی ملک عدالتی نظام کی کمزوری کامتحمل نہیں ہوسکتا ۔انہوں نے کہا کہ شہریوں کے بنیادی انسانی حقوق کیلئے عدالت عظمیٰ کی حالیہ اصلاحات قابل قدر ہیں،نظام عدل پرعوام کے اعتمادکی بحالی کاکریڈٹ چیف جسٹس میاں ثاقب نثار اوران کے ٹیم ممبرز کوجاتا ہے ۔شہریوں کو بیمار شعبہ صحت کے رحم وکرم پرنہیں چھوڑاجاسکتا ،عدالت عظمیٰ کی شعبہ تعلیم ،صحت کی بحالی سمیت شہریوں کوپینے کے صاف پانی کی فراہمی یقینی بنانے کیلئے کی جانیوالی اصلاحات بجاطورپردرست اوردوررس ہیں۔عدالت عظمیٰ کے جج جسٹس اعجاالاحسن کی رہائشگاہ پرفائرنگ کرنیوالے عناصر کودنیا کی کوئی طاقت قانون کی گرفت اورمنطقی انجام سے نہیں بچاسکتی ۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 انٹر نیٹ کی دنیا میں سب سے زیادہ پڑھے جانے والے مضا مینں
loading...

 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved