فرانس کے کارساز اداروں نے ایران میں کاروبار بند کر دیا
  9  اگست‬‮  2018     |     یورپ

پیرس ۔ (اے پی پی) ایران پر پھر سے امریکی پابندیاں لاگو ہونے سے پہلے ہی فرانسیسی کار ساز اداروں نے ایران میں اپنا کاروبار بند کر دیا تھا۔ لگتا یوں ہے کہ اس خلا کا چین بھرپور فائدہ اٹھانے کے لیے تیار ہے۔ایسے اقدام کی صورت میں، ایک بار پھر امریکہ اور چین کے درمیان تنازع اٹھ کھڑا ہوگا، جس کے نتیجے میں دونوں کی مخاصمت میں اضافہ ہوگا، جو پہلے ہی بڑھتے ہوئے تجارتی تنازع میں الجھے ہوئے ہیں۔فرانسیسی کارساز کمپنی، ’رینو‘ دنیا کا بارہواں بڑا ادارہ ہے۔ وہ ایران کی منڈی

میں کاروں کی صنعت کی تقریباً آٹھ فی صد کی مالک تھی۔ ادارے نے گذشتہ ماہ اعلان کیا کہ امریکی تعزیرات کی عمل درآمد پر وہ 100 سے زیادہ بین الاقوامی اداروں کے ہمراہ ایران سے نکل جائے گا۔ پابندیوں کا آغاز منگل کے دِن سے ہوا۔ ’رینو‘ امریکہ کاروبار نہیں کرتا۔’پیجو‘ نے جون میں ملک سے نکلنے کا اعلان کیا تھا۔ کمپنی ایرانی مارکیٹ میں 34 فی صد حصص کی مالک تھی، یعنی ایک سال میں تقریباً 500000 کاریں فروخت کیا کرتی تھی۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






آج کا مکمل اخبار پڑھیں

یورپ

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved