03:33 pm
اٹلی اور سپین میں کرونا وائرس پھیلنے کی وجہ صرف ایک میچ تھا

اٹلی اور سپین میں کرونا وائرس پھیلنے کی وجہ صرف ایک میچ تھا

03:33 pm

روم (مانیٹرنگ ڈیسک) یورپ ملک کے ملکوں اٹلی اور سپین کو کرونا وائرس کی وبا نے ایسا لپیٹے میں لیا کہ چند ہی ہفتوں میں وہاں ہلاکتوں کی تعداد ہزاروں میں جا پہنچی ۔ اب وقت اس موذی وبا سے 35ہزار افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں جن میں سے صرف ان دوملکوں میں مرنے والوں کی تعداد 20ہزار کے لگ بھگ ہے۔ اب ہیلتھ سائنس کے ماہرین نے ان دوملکوں کی اینٹ سے اینٹ بجا دینے والےاس وائرس کی اس ملک میں موجودگی کی ایک ایسی وجہ بتا دی ہے کہ سننے والے چونک کر رہ جائیں گے۔ اٹلی اور
سپین میں کرونا وائرس پھیلنے کی وجہ ایک فٹ بال میچ قرار دیا جا رہا ہے۔ایک غیر ملکی ویب سائٹ کی رپورٹ کے مطابق یہ میچ اٹلی کے شہر میلن میں اٹلانٹا اور ویلنشیا کے درمیان کھیلا گیا تھا ۔ میلن کے معروف سین سیرو سٹیڈیم میں ہونے والے اس میچ کو دیکھنے 40ہزار لوگ آئے اور اس کے دو ہفتے بعد جرمنی اور سپین کے طول و عرض میں کورونا وائرس کے کیس تیزی سے سامنے آنے لگے۔ ماہرین ان کیسز کا تعلق 19فروری کو ہونے والے اس فٹ بال میچ سے جوڑ رہے ہیں۔ماہرین کا کہنا ہے کہ ویلنشیاءکی آدھی سے زیادہ ٹیم بھی کورونا وائرس سے متاثر ہوئی۔ اس میچ کے دو دن بعد اٹلی میں مقامی سطح کا پہلا کیس سامنے آیا۔ چنانچہ ماہرین کورونا وائرس کے حوالے سے سین سیرو سٹیڈیم کو ’گراؤنڈ زیرو‘ قرار دے رہے ہیں۔ برگیمو کے میئر جیورجیو گوری کا کا کہنا تھا کہ ”اگر ماہرین کی بات درست ہے کہ کورونا وائرس جنوری میں ہی یورپ میں پہنچ چکا تھا، تو یقینا اس میچ نے اسے پھیلانے میں بہت اہم کردار ادا کیا ہو گا اور 40ہزار تماشائیوں میں سے بڑی تعداد وائرس سے متاثر ہو کر سٹیڈیم سے واپس گئی ہو گی۔