04:56 pm
 گلگت بلتستان کو اندھیرے میں دھکیلا جا رہا ہے ،جعفراللہ خان

گلگت بلتستان کو اندھیرے میں دھکیلا جا رہا ہے ،جعفراللہ خان

04:56 pm

گلگت ( بشارت حسین ) گلگت بلتستان اسمبلی کے 37 ویں اجلاس کے تیسرے روز اجلاس سپیکر اسمبلی فدا محمد ناشاد کی زیر صدارت منعقد ہوا دوران اجلاس پوائنٹ آف آرڈر پر بات کرتے ہوئے ڈپٹی اسپیکر جعفر اللّٰہ خان نے کہا کہ اس وقت گلگت بلتستان میں بجلی کی شدید قلت ہے اور بجلی کا بحران بڑھ رہا ہے پاور پراجیکٹ بنانا چاہتے پیں لیکن ان پر غیر ضروری حربوں کے ذریعے تاخیر کروائی جارہی ہے ہینزل پاور پراجیکٹ پر 3 سال سے سکروٹنی کے بعد ٹیکنیکل بڈ مکمل ہوا تھا
جس میں دو کمپنیاں فائینل ہوئی تھی اور اب فائینل بڈ نکلنے والا تھا لیکن ایف ڈبلیو او نے کشمیر افیئرز میں درخواست دے کر بیج میں آیا ہے جسکی وجہ سے تاخیر ہو رہی ہے جس کی وجہ سے شہر میں بجلی کے بحران میں مزید شدت آگئی ہے انہوں نے کہا کہ ناصر ملک کی کمپنی ایف ڈبلیو او کی پشت میں کھڑی ہے اور ہینزل پاور پروجیکٹ کا ٹھیکہ حاصل کرنا چاہتی ہے جوکہ مکمل پیپرا رول کے خلاف ورزی ہے ایف ڈبلیو او اور این ایل سی ہر جکہ میں کھستے ہیں آرمی چیف اور فورس کمانڈر ایف ڈبلیو او کی بے جا مداخلت پر نوٹس لیکر ان کے خلاف کارروائی کریں ایف ڈبلیو او بے جا مداخلت کرکے لاہوری کمپنی کو ٹھیکہ دینا چاہتا ہے بد قسمتی سے ہمارے ملک میں شفارش چلتی ہے جب بھی کوئی منصوبہ منظور ہوتاہے تو ایف ڈبلیو او بھی بیج میں ٹپک پڑتا ہے انہوں نے مزید کہا کہ یہ لوگ ہمیں 4G اور بجلی سہی نہیں دے رہے ہیں تو آئینی حقوق کیا دیں گے انہوں نے کہا کہ کیوں گلگت بلتستان کو اندھیرے میں دھکیلا جا رہا ہے ہمارے خلاف شازش ہو رہی ہے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سینئر اکبر تابان نے کہا کہ ایف ڈبلیو او ہینزل پاور پروجیکٹ میں پیپرا رول کے مطابق کوالیفائی نہیں کر سکے اور پری بھی نہیں ہوئے ہیں اس لئے دوسری دو کمپنیوں نے کوالیفائی کیا ہے اگلے کچھ دنوں میں فائینل بڈ ہوگا اور کام بھی شروع ہو گا جس پر سپیکر اسمبلی فدا محمد ناشاد نے کہا کہ گلگت بلتستان میں اکثر ایسا ہی ہوتا ہے گلگت سکردو روڈ میں بھی اس قسم کے حربے استعمال کیے گئے اور تین سال تک گلگت سکردو روڈ پر کام معطلی کا شکار رہا لہذا میرٹ کو فالو کرتے ہوئے صاف شفاف طریقے سے اور پیپرا رول کے مطابق کام دیا جائے

تازہ ترین خبریں