05:57 pm
کے آئی یو:یم ایس،ایم بی اے کی کلاسوں کا باقاعدہ آغاز

کے آئی یو:یم ایس،ایم بی اے کی کلاسوں کا باقاعدہ آغاز

05:57 pm

گلگت ( اوصاف نیوز) قراقرم انٹرنیشنل یونیورسٹی نے ویکینڈ گریجویٹ سکول کے تحت سمسٹر بہار ایم ایس اور ڈیڑھ سالہ ایم بی اے میں باقاعدہ کلاسوں کا آغاز ہوگیا ۔جبکہ یونیورسٹی میں پہلی دفعہ شروع ہونے والے اردو پروگرام کے طلباء بھی تعارفی نشست میں آئے ۔ایم اے اردو کی کلاسوں کا باضابطہ افتتاح پیر کے روز وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر عطاء اللہ شاہ کریں گے۔ویکینڈ گریجویٹ سکول کے تحت شروع ہونے والے پہلے دن کی کلاسوں میں طلبہ و طالبات کی شرکت قابل دید تھی
۔پہلے دن ویکینڈ گریجویٹ سکول کے ایم ایس کے چھ مختلف پروگرامز جن میں ایم ایس بیالوجیکل سائنسز (PLANT)َایم ایس فوڈاینڈ ایگرکلچر،ایم ایس کیمسٹری ،ایم ایس انوائرمنٹل سائنسز،ایم ایس ریاضی ،ایم ایس فزکس سمیت ڈیڑ سالہ ایم بی اے میں باقاعدگی کے ساتھ کلاس ہوئی ۔ ڈین لائف سائنسز ڈاکٹرخلیل احمد اور ڈین سوشل سائنسز ڈاکٹر رمضان نے ویکینڈ گریجویٹ سکول کے تحت ہونے والی پہلے کلاسوں کا دورہ بھی کیا۔وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر عطاء اللہ شاہ نے کلاسوں کے آغاز ہونے پر اپنے پیغام اسے گلگت بلتستان بلخصوص قراقرم یونیورسٹی کے لیے تاریخ ساز دن قرار دیتے ہوئے معیاری و اعلیٰ تعلیم کے فروغ کے لیے پیش خیمہ قرار دیا۔وائس چانسلرنے ویکیند گریجویٹ سکول کے تحت کلاسوں کا آغازکرنے پر پوری KIUفیملی کو مبارک باد پیش کرتے ہوئے خطے میں اعلیٰ تعلیم کے فروغ کے لیے مزید جہدوجہد کرنے کی تاکید کی۔وائس چانسلر نے گلگت بلتستان اور قراقرم یونیورسٹی کی تاریخ میں پہلی دفعہ ایم اے اردو پروگرام شروع ہونے پر مبارک باد پیش کرتے ہوئے پروگرام شروع کرانے میں کردار اد ا کرنے پر ڈین سوشل سائنسز ،ڈین لائف سائنسز سمیت تمام فیکلٹی و منیجمنٹ اسٹاف کی کوششوں کی تعریف کی۔وائس چانسلر نے کہاکہ گلگت بلتستان کے لوگوں کو قومی زبان اردو سے کافی لگائو ہے ۔جس کا ثبوت شعبہ اردو میں طلباء کا داخلوں کے لیے موصول ہونے والی درخواستیں ہیں۔وائس چانسلر نے کہاکہ بہت جلد یونیورسٹی میںدیگر مقامی اور علاقائی زبانوں میںبھی پروگرام شروع کئے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ اگلے ہفتے شعبہ اردو آغاز کرنے کے حوالے سے افتتاحی تقریب بھی منعقد کیجائے گی ۔جس میں مشہور شاعروں ادیبوں سمیت حلقہ ارباب زوق کو مدعو کیاجائے۔وائس چانسلرنے کہاکہ یونیورسٹی بہت جلد گلگت بلتستان کے مختلف مقامی زبانوں پر تحقیق کرے گا۔جس سے گلگت بلتستان مقامی زبانوںکو پروان چڑھنے میں مد د ملنے سمیت مقامی زبانوں کے حوالے سے زیادہ سے زیادہ عالمی و ملکی سطح پر آگاہی ملے گی

تازہ ترین خبریں