05:34 pm
انسدادپولیوکے لیے ہرفردکوعبادت کے طورپرکرداراداکرناہوگا،ڈپٹی کمشنرسکردو

انسدادپولیوکے لیے ہرفردکوعبادت کے طورپرکرداراداکرناہوگا،ڈپٹی کمشنرسکردو

05:34 pm

سکردو(اوصاف نیوز )پولیو ایک مہلک مرض ہے اور بچوں کو اس مرض سے بچانے کے لیے معاشرے کے ہر فرد کو عبادت کے طور کردار ادا کرنے کی ضرورت ہے پولیو مہم ایک اہم قومی کاز ہے اور وزیر اعظم سیکریڑیٹ میں بھی روزانہ کی بنیاد پر مانیٹرینگ ہورہی ہے ۔ ضلعی انتظامیہ سکردو کے دونوں سب ڈویژنوں میں مانیٹرینگ کے نظام کو نہ صرف مئوثر کرے گی بلکہ تین روزہ مہم کے دوران ہر شام کو مانیٹرینگ میٹنگ کا بھی انعقاد کیا جائے گا
اور روزانہ کی بنیاد پر پورے دن کی سرگرمیوں کا جائزہ لیا جائے گا۔ یہ بات ڈپٹی کمشنر سکردو نوید احمد نے آج سکردو میں چیئرمین انسداد پولیو کی حثیت سے صدارت کرتے ہوئے اجلاس میں شریک شرکائو سے گفتگو کرتے ہوئے کہی ۔اجلاس میں ایس ایس پی سکردوسمیت دیگر اہم محکمہ جات کے آفیسروں نے شرکت کیں۔ انہوں نے کہا کہ گلتر ی کی دو یونین کونسلوں کے علاوہ ضلع کی ۱۴ یونین کونسلوں میںرواں سال کے دوسرے رونڈ میں ۲۲ اپریل سے تین روزہ مہم کا آغاز ہوگا ۔اور چوتھے روز کیچ اپ پروگرام کے تحت تین روزہ مہم میں رہے جانے والے بچوں کو پولیو کے خلاف قطرے پلوائے جائینگے اس کے علاوہ دو سال تک کے عمر کے بچوں کو اس رونڈ میں وٹامن اے کی گولیاں بھی دی جائینگی ۔ انہوں نے کہا کہ جون ،جولائی اور اگست میں گلتری کے مہم میں رہے جانے والے بچوں کے لیے خصوصی مہم شروع کرنے کی ہدایت دی ۔ انہوں نے کہا کہ بلتستان میں موسم بہار کے شروع ہوتے ہی سیاحوں کا رش بڑھ رہا ہے اور جس ے پولیو کیخلاف قطرے پلوانے کی مہم میں بھی بچوں کا اضافہ ہوسکتا ہے اس لیے محکمہ صحت پہلے ہی سے منصوبہ بندی کریں اور بچوں کو اس مہم سے ہی بہتر انداز میں قطرے پلوانے کا بندوبست کریں ۔ انہوں نے کہا کہ چیک پوسٹوں پر تین روزہ مہم میں بچوں کو قطرے پلوانے کے لیے محکمہ پولیس کی ٹیم موجود رہے گی اور تمام چیک پوسٹوں پر پولیس فورس کی بروقت تعییناتی عمل میں لائی جائے گی اور کسی بھی بچے کو پولیو کے قطرے پلوانے کے بغیر نہیں چھوڑا جائے گا۔ انہوں نے محکمہ صحت کو ہدایت دی ہے کہ شہر کے تمام ہوٹلوں اور گیسٹ ہاوسیز میں بھی بچوں کو تلاش کر کے پولیو کے خلاف قطرے پلوائے جائیں ۔ انہوں نے گھر گھر مہم کے دوران پولیو کے خلاف مہم میں ڈور مارکینگ اور انگھوٹو ں میں نشانات لگانے کے لیے بہتر کوالٹی کے مارکرز کی فراہمی کی ضرورت پر بھی زور دیا ہے ۔ انہوں نے ضلعی ہیلتھ آفیسر کو ضلع کے دوردارز مقامات پر ٹیموں کی موثر موجودگی اور بر وقت رپورٹس حاصل کرنے کی بھی ہدایت دی ہے ۔ انہوں نے مائیکرو پلان اور دیگر میٹنگز کو بھی موثر بنانے کی ضرورت پر زور دیا ہے۔اجلاس میں چیئر مین انسداد پولیو نے محکمہ تعلیم کے آفیسر کو ہدایت دی کہ وہ تین روزہ مہم کے دوران بچوں کو اسمبلی میں ہی پولیو مہم کی اہمیت اور افادیت کے حوالے سے بتانے کے انتظامات کو حتمی شکل دیں۔انہوں نے تمام مکاتب فکر کے امام جمعہ سمیت علمائے کرام ، معززین اور شہریوں کو پولیو مہم کی اہمیت کے بارے میں لوگوں کو واضع نصیت کرنے کے لیے موثر اقدامات کرنے کی ضرورت پر بھی زور دیا اور آنے والے جمعہ کو تمام مساجد سے پولیو کی مہم کی اہمیت اجاگر کرنے کے بارے میں تقاریر کروانے کے لیے ضلعی ہیلتھ آفیسر موثر اقدامات کرنے کی ہدایت دی ۔اجلاس میں ضلعی ہیلتھ آفیسر سکردو نے رواں سال کی مہم کے انتظامات کے حوالے سے تفصیلات بیاں کرتے ہوئے کہا کہ ضلع کے 32246 بچوں کو پولیو تین روزہ مہم کے دوران قطرے پلوانے کا حدف مقرر کیا گیا ہے جس کے لیے محکمہ صحت سکردو نے ۱۴ زونل سپروائزر ۳۸ ایر یا انچارجز مقرر کیے گئے ہیں اس کے علاوہ ۱۳۹ موبائل ٹیمیں ،۴۵ فکسڈ سنٹرز اور ۱۰ ٹرانسپورٹ پوائنٹس قائم کیے جارہے ہیں ۔ اجلاس میں شریک شرکائو نے پولیو مہم کے بہتر انداز میں انعقاد کے لیے مشورے بھی دیے۔

تازہ ترین خبریں