05:05 pm
خواتین کو تحفظ دینے کیلئے کارکردگی صفر،عملی اقدامات کرناہونگے(شیریں فاطمہ،سعیدہ مغل)

خواتین کو تحفظ دینے کیلئے کارکردگی صفر،عملی اقدامات کرناہونگے(شیریں فاطمہ،سعیدہ مغل)

05:05 pm

گلگت ( سٹاف رپورٹر ) گلگت بلتستان کی خواتین کو تحفظ فراہم کرنے کے حوالے سے تاحال صوبائی اسمبلی گلگت بلتستان میں کوئی قانون سازی نہیں کی گئی حکومت نے بعض اہم شعبوں اور وزارتوں میں خواتین کو اہم ترین ذمہ داریاں بھی سونپ رکھی ہیں مگر اس کے باوجود بھی خواتین کو ترقی دینے اور خواتین کے حقوق کو قانونی طور پر تحفط فراہم کرنے کے حوالے سے اسمبلی میں کوئی بل پاس نہیں ہو سکا ، پاکستان مسلم لیگ ن کی حکومت اپنی پانچ سالہ مدت پوری کرنے
کو ہے اس دوران خواتین کے حقوق کو تحفظ دینے اور ان کو با اختیار بنانے کیلئے حکومت کی کارکردگی صفر ہے ۔ ان خیالات کا اظہار مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والی سیاسی و سماجی خواتین ، شیریں فاطمہ ، سعیدہ مغل ، یاسمین افضل ، شازیہ شوکت نے اوصاف سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے مزید کہا کہ مسلم لیگ ن کی حکومت نے خواتین کے حقوق کیلئے زبانی خرچ کیع لاوہ کچھ نہیں کیا خواتین کو ترقی کے راہوں پر گامزن کرنے کیلئے ہوائی اعلانات سے کچھ نہیں ہوتا بلکہ حکومت کو عملی اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے ۔ پاکستان پیپلز پارٹی خواتین ونگ کی صدر شیریں فاطمہ نے کہا ہے ہک پاکستان پیپلز پارٹی نے ہمیشہ خواتین کی بہبود کیلئے تسلی بخش کام کیا ہے پیپلز پارٹی کے سابق حکومت نے وسیلہ حق روزگار ، بینظیر انکم سپورٹ جیسے دیگر پروگرام شروع کئے ہیں ان سب کا مقصد خواتین کو معاشی حالت بہتر بنانا ہے ، گلگت بلتستان کی سیاسی تاریخ میں کسی بھی حکومت نے خواتین کو کسی شعبے میں اس طرح ترقی نہیں دی جس طرح پیپلز پارٹی نے دی ہے

تازہ ترین خبریں