06:26 pm
ثوبیہ مقدم کووزارت سے ہٹاناامتیازی سلوک،ساتھ کھڑے ہیں،سعدیہ دانش

ثوبیہ مقدم کووزارت سے ہٹاناامتیازی سلوک،ساتھ کھڑے ہیں،سعدیہ دانش

06:26 pm

گلگت (کرن قاسم سے ) پاکستان پیپلزپارٹی گلگت بلتستان کی سیکریٹری اطلاعات سعدیہ دانش نے کہاہے کہ کارکردگی کو بنیاد بناکر ثوبیہ مقدم کو وزارت سے ہٹانے سے قبل وزیر اعلیٰ ایسے وزراء کو بھی فارغ کرتے جن کی کارکردگی کا ذکر تو دور کی بات بلکہ مکمل طور گمنام ہے اگر منفی بنیاد پر ثوبیہ مقدم کے ساتھ امتیازی سلوک کیا گیا ہے تو ہم ثوبیہ مقدم کے ساتھ کھڑے ہیں اور غیر جمہوری اقدام کی شدید مذمت کرتے ہیں
۔ سعدیہ دانش نے اوصاف سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان نے ذاتی اختلافات پر ثوبیہ مقدم کو وزارت سے ہٹاکر غیر جمہوری رویہ اپنا یا ہے ۔وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان کو چار سال بعد میرٹ کا خیال آیا کہ کابینہ کے اجلاسوں میں عدم شرکت کی وزیر اعلیٰ بتائے جب خواتین کو مخصوص نشستوں پر منتخب کیاجاتا رہا اس وقت میرٹ کا خیال کیوں نہیں آیا مخصوص نشستوں پر ایسی خواتین کو منتخب کیاگیا جن کا سیاست سے دور دور تک کا بھی وابستہ نہیں تھا جو پارٹی اپنے ورکرز کو نظر انداز کرتی ہے اور ایسے لوگوں کو عہدوں پر فائز کرتے ہیں جو غیر منتخب ہوتے ہیں تب پارٹی میں اختلافات اور غیر جمہوری فیصلے ہوا کرتے ہیں ۔انہوںنے مزید کہاکہ وزیر اعلیٰ کی کابینہ میں شامل تمام وزراء کی کارکردگی صفر ہے وزراء کابینہ اور اسمبلی اجلاسوں میں شرکت تو دور کی بات بلکہ ان کے دفاتر میں تالے لگے ہوئے ہیں ایسے وزراء نہ عوام کے فلاح کے لئے کچھ کرسکیں ہے تو نہ ہی علاقے کی ترقی کے لئے اقدامات اٹھاسکے ہیں کارکردگی کے بنیاد پر وزرات سے ہٹانا ہے تو وزیر اعلیٰ بتائے کہ وہ اپنے کابینہ میں شامل کس کس وزیر کو فارغ کردینگے۔ صوبائی وزراء اور خواتین ممبران اسمبلی کی کارکردگی کی بات کی جائے تو نہایت افسوس کے ساتھ کہنا پڑتا ہے کہ خواتین ممبران کی اور وزراء کی کارکردگی صفر ہے چار سال کے طویل مدت میں خواتین کے متعلق اسمبلی میں کوئی قانون سازی نہیں ہوسکی اور نہ ہی خواتین کے فلاح و بہبود اور انہیں قومی دھارے میں شامل کرنے کے لئے کوئی اقدامات اٹھائے گئے۔ ثوبیہ مقدم نے سکولوں کا دورہ کرکے سکول کے بچیوں کے ہاتھ میں نواز شریف کے نام کے لئے کارڈ دے کر زبردستی نواز شریف کے حق میں نعرے لگائے گئے سکولوں میں سیاسی نعرہ بازی بھی غیر اخلاقی رویہ ہے ۔انہوںنے کہاکہ ورکرز کی حیثیت پارٹی میں ریڈھ کی ہڈی کی طرح ہوتی ہے ورکرز کو اپنے ذاتی مفادات پر نظر انداز کرکے غیر منتخب شدہ افراد کے مشورے پر چلنا اور غیر سیاسی لوگوں کو ٹیکنو کریٹس کے عہدے پر فائز کرنے سے پارٹی کی کارکردگی خراب ہوجاتی ہے پاکستان پیپلزپارٹی نے ہمیشہ اپنے ورکرز کو اہمیت دی اور ورکرز کو ساتھ لے کر آگے چلتی ہے۔

تازہ ترین خبریں