06:36 pm
خاتون وزیرکی برطرفی انتقامی کارروائی،مسلم لیگ ن کی وکٹیں جلدگرائیں گے،فتح اللہ خان

خاتون وزیرکی برطرفی انتقامی کارروائی،مسلم لیگ ن کی وکٹیں جلدگرائیں گے،فتح اللہ خان

06:36 pm

گلگت (محمد ذاکر سے) پاکستان تحریک انصاف گلگت بلتستان کے سیکریٹری جنرل فتح اللہ خان نے کہاہے کہ مذہب کا تڑکا سیاسی مقاصد کے لئے استعمال کی ہے نہ کریں گے۔2015 کے انتخابات میں مذہبی کارڈ استعمال کرنے والے مقاصد حاصل کرنے کے بعد علماء کرام کو برا بھلا کہتے رہے۔ گلگت بلتستان میں وزیر اعلیٰ کا رویہ مختلف وفاق میں مختلف ہوتا ہے گلگت بلتستان میں اپنی تقریروں میں پاکستان تحریک انصاف کی قیادت کو اڑے ہاتھوں لیتے ہیں
وفاق میں جاکر حفیظ الرحمن وفاقی وزیر امور کشمیر اور وزیر اعظم پاکستان عمران خان سے ملاقات کے لئے فریاد ی بن جاتے ہیں حفیظ خوش فہمی میں نہ رہیں عنقریب گلتگ بلتستان سے مسلم لیگ ن کی بڑی وکٹیں گرادیں گے۔ پاکستان تحریک انصاف کے صوبائی سیکریٹری جنرل فتح اللہ خان نے اوصاف سے گفتگو کرتے ہوئے کہاہے کہ پیپلزپارٹی اور مسلم لیگ ن نے آج تک گلگت بلتستان کو مذاق بناکر رکھ دیا ہے جی بی کے بنیادی آئینی حقوق کا مسئلہ حل کرنے کے بجائے کئی دہائیوں سے ٹرخانے کے سواکچھ نہیں کیا گیا ہے گلگت بلتستان کو حقوق سے محروم رکھنے کے ذمہ دار حفیظ اور پیپلزپارٹی ہے مجھے یقین ہے کہ گلگت بلتستان کی ستر سالہ محرومیوں کا ازالہ تحریک انصاف ہی کرے گی۔ انہوںنے کہاکہ حفیظ الرحمن کا گلگت بلتستان میں چار نئے اضلاع بنانے کا اعلان ڈھونگ ہے میں چیلنج کرتا ہوں حفیظ داریل ،تانگیر ،یاسین اور گوپس اضلاع بنانے پر عملدرآمد نہیں کراسکتے ہیں ۔ تحریک انصاف کی حکومت ہی چاروں اضلاع پر عملدرآمد یقینی بنائے گی ۔انہوںنے کہاکہ گلگت بلتستان میں جنگل کا قانون رائج ہے حفیظ اپنے چہیتوں کے ذریعے قومی اداروں کو لوٹ رہے ہیں اور ترقیاتی بجٹ کٹوتی کا الزام تحریک انصاف حکومت پر لگاکر عوام کو گمراہ کرنے کی ناکام کوشش کررہے ہیں۔ وزیر اعظم پاکستان عمران خان نے گلگت بلتستان کے بجٹ سے ایک روپے کی کٹوتی نہیں کی ہے حفیظ مشرف دور کے ترقیاتی منصوبوں پر اپنی تختیاں لگاتے پھر رہے ہیں بہت جلد عوام کو اصل حقائق سے آگاہ کروں گا۔ انہوںنے کہاکہ حفیظ الرحمن نے بھی مہدی شاہ کی طرح عوامی منصوبوں کو گلگت بلتستان کے عوام کے لئے قبروستان بناکے رکھ دیا ہے حفیظ عوامی جلسوں میں جاکر کھربوں ترقیاتی منصوبوں کی بات کرتے ہیں مجھے جواب دیں کہ گلگت شہر جوٹیال تا پونیال روڑ تک مین شاہراہوں کی حشر کیاہے اور تمام سڑکیں کھنڈرات میں تبدیل ہوچکی ہے صرف اپنے چہیتے ٹھیکیداروں کے ذر یعے اداروں کو لوٹنے کے لئے کاغذی کاروائیوں میں کھربوں کے حساب سے کام جارہی ہے ۔انہوںنے کہاکہ تحریک انصاف میں کوئی گروپ بندی نہیں البتہ عہدے کی حصول کے لئے لابنگ ہے مرکزی قیادت صوبائی صدارت جس کسی کو بھی سونپ دیں دل سے تسلیم کریں گے۔ اور پارٹی کی فعالیت اور مضبوطی کے لئے پہلے کی طرح کام کریں گے اور کلیدی کردار ادا کریں گے۔ مگر پارٹی کے خلاف کسی سازش کا حصہ نہیں بنوں گا اگر مرکزی قیادت گلگت بلتستان تحریک انصاف کی ذمہ داری کسی کھمبے کو بھی سونپ دیں دل سے تسلیم کروں گا۔ فتح اللہ خان نے ایک سوال کے جواب میں کہاکہ ملک بھر کی طرح گلگت بلتستان میں بھی پارٹی رکنیت سازی مہم جاری ہے رکنیت سازی مرحلہ مکمل ہوتے ہی چیئرمین تحریک انصاف پاکستان و وزیراعظم پاکستان پارٹی آئین سازی کی منظوری دیں گے چیئرمین کی منظوری سے ہی گلگت بلتستان صوبائی کابینہ کی منظوری سب سے پہلے دی جائے گی۔ یکم مئی کو عمران خان کی آئین سازی منظوری سے گلگت بلتستان صوبائی کابینہ کا اعلان ہوگا۔ انہوںنے کہاکہ دیامر کے عوام محب وطن پاکستانی ہیں ٹمبر پالیسی بڑا مسئلہ بن گیا ہے مذاکرات جاری ہیں بہت جلد دیامر ٹمبر پالیسی مسئلے کو حل کرکے عوام کے تحفظات دور کریں گے۔ انہوںنے کہاکہ گلگت بلتستان باالخصوص گلگت حلقہ دو سے مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی کی اہم شخصیات صوبائی وزراء ،ممبران تحریک انصاف میں شامل ہونے کے لئے رابطے کررہے ہیں رمضان المبارک کے بعد گلگت بلتستان سے مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی سے بڑی شخصیات تحریک انصاف میں شامل ہونگے۔ انہوںنے کہاکہ ایک دور میں حفیظ اور مہدی شاہ کو ناکام کرنے کے لئے مختلف ہتھکنڈے استعمال کئے تھے مگر ہم سازش نہیں کررہے ہیں بلکہ حفیظ الرحمن مشرف دور کے ترقیاتی کاموں پر اپنے نام کی جعلی تختیاں لگاکر خود اپنے خلاف سازش کررہے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ جلال آبا د سے مسلم لیگ ن ،پیپلزپارٹی اور مذہبی جماعتوں سے سینکڑوں نوجوانوں نے تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کرلی ہیں عنقریب گلگت حلقہ ایک ،دو اور تین سے مزید نوجوان تحریک انصاف میں شامل ہونگے اور تحریک انصاف چار سال پہلے سے زیادہ مضبوط جماعت بن کر ابھرے گی ،امجد ایڈووکیٹ اور حفیظ خوش فہمی میں نہ رہیں عنقریب گلگت بلتستان سے مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی کی اہم وکٹیں گرادیں گے۔ گلگت (اوصاف نیوز) سیکریٹری جنرل پاکستان تحریک انصاف گلگت بلتستان فتح اللہ خان نے میڈیا کو جاری بیان میں کہا ہے کہ کہ خاتون وزیر کو زاتی زنجش بغض اور عناد کی وجہ سے کابینہ سے نکالنا وزیر اعلی کی منافقانہ سوچ کی عکاسی ہے وزیر اعلی اپنے ارد گرد ایسے لوگوں کو رکھتے ہیں جو ان کی ہر بات پر سب اچھا ہے کا راگ الاپتے رہیں خاتون وزیر کو دیامر کی محرومیوں پر سوال کرنے کی سزا دی گئی ہم نے گزشتہ چار سال ہر فارم پر یہ بات کی ہے کہ حفیظ سرکار مخالفین کے خلاف انتقامی کاروایوں میں سرگرم عمل ہے لیکن اس سے بھی ایک قدم آگے اپنی ہی کابینہ کی خاتون وزیر کو مہرومیوں کے ازالے کا سوام کرنے پر نکال کر وزیر اعلی نے اپنی منافقانہ سوچ گلگت بلتستان کے لوگوں کے سامنے واضح کردی ہے اضلاع کے جھوٹے اعلانات کے وقت 2018آڈر کا گن گانے والے اس آڈر کی عوام کے سامنے تشریح کریں کہ آڈر کے مطابق وزیر اعلی کے پاس کابینہ سے وزیر نکالنے کا مینڈیٹ ہے بھی یا نہیں بجھتے چراغ کی مانند لیگی حکومت ٹمٹما رہی ہے کیونکہ وزیر اعلی اور ان کے حواریوں کو سیاسی موت نظر آ چکی ہے آئندہ انتخابات لیگی کارندوں کو عوام کے شدید غصے کا سامنا کرنا پڑیگا اس سال کا بجٹ ایڈوانش میں لیگی حکومت لے چکی ہے صوبائی حکومت کے پاس عوام کو دینے کے لئے کچھ نہیں لیکن اعلانات اربوں میں کئے جا رہے ہیں عوام انکی منافقانہ سیاست سمجھ چکی ہے لڑاو اور حکومت کرو کی پالیسی اب مزید نہیں چلیگی گلگت بلتستان کے کسی بھی کونے میں عوام کے ساتھ ظلم کیا گیا تو پورا گلگت بلتستان اس امر کے خلاف اواز اٹھائیگا، مختلف شوشیں چھوڑ کر اپنی مردہ سیاست میں جان ڈالنے کی وزیر اعلی کی تمام کوششیں ناکام ہونگی اپنے حواریوں کو نوازنے کی روش پر ان کا کڑا احتساب کیا جائیگا تعریفیں کرنے والوں کو اپنے ارد گرد بٹھا کر گلگت بلتستان کی تعمیر و ترقی پر شبخون مارنے پر عوام آئیندہ انتخابات میں ووٹ کے زریعے ان کا احتساب کریگی اور پاکستان تحریک انصاف حکومت میں آکر عوام کی لوٹی ہوئی پائی پائی کا حساب وزیر اعلی اور ان کے ٹولے سے ہر حال میں لیگی کرپٹ ٹولے ہو ان کا مستقبل مناور جیل میں نظر آرہا ہے اس لئیبوکھلاہٹ کا شکار ہومن گھڑت اعلانات اور حرکتیں کی جا رہی ہیں۔

تازہ ترین خبریں