05:16 pm
پی ٹی آئی کارکن مطمئن رہیں،پارٹی آئین مکمل ہونے پرتنظیم سازی ہوگی(محمدشاہد،آمنہ انصاری)

پی ٹی آئی کارکن مطمئن رہیں،پارٹی آئین مکمل ہونے پرتنظیم سازی ہوگی(محمدشاہد،آمنہ انصاری)

05:16 pm

گلگت(خصوصی رپورٹر) پاکستان تحریک انصاف گلگت بلتستان کے سینئر رہنماء و سابق صوبائی صدر انصاف سٹوڈنٹس فیڈریشن گلگت بلتستان محمد شاہد اور رکن پاکستان تحریک انصاف آئین ساز کمیٹی و سابق ممبر اسمبلی ایڈووکیٹ آمنہ انصاری نے کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف گلگت بلتستان کی تنظیم سازی پارٹی آئین کے مکمل ہونے کے بعد کی جائیگی، جس میں کچھ وقت لگے گا، پی ٹی آئی کو ایک ادارہ بنانا عمران خان کا خواب تھا
جس کو عملی جامہ پہنانے کے لئے چیف آرگنائزر سیف اللہ خان نیازی اور سیکریٹری جنرل ارشد داد دن رات کام کر رہے ہیں اس سلسلے میں کارکنان کسی بھی قسم کے پروپیگنڈے اور انتشار میں نہ آئیں اور جب تک تنظیم سازی نہیں ہو جاتی تمام خودساختہ عہدے کالعدم قرار دے گئے ہیں، سابق صوبائی صدر انصاف سٹوڈنٹس فیڈریشن گلگت بلتستان محمد شاہد نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی گلگت بلتستان کے صوبائی صدارت کیلئے پارٹی کے درینہ کارکن کو منتخب کیا جائے گا اور جس پر کوئی کیس نہیں چل رہا ہو جس کے قانونی قوائف مکمل ہو اور صاف ہو، پارٹی کو گلگت بلتستان میں فعال اور منظم طریقے سے چلانے کا اہل رکھتا ہوں ایسے فرد کو سامنے جلایا جائے گا،سابق صوبائی صدر انصاف سٹوڈنٹس فیڈریشن گلگت بلتستان محمد شاہد نے کہا ہے کہ پارٹی آئینی کمیٹی میں گلگت بلتستان سے ایڈووکیٹ آمنہ انصاری اور جسٹس ریٹائرڈ سید جعفر شاہ صاحب کو شامل کیا گیا ہے جو کہ گلگت بلتستان کے زمینی حقائق کو مرکزی قیادت کو آگاہ کرینگے اور پارٹی آئین میں گلگت بلتستان کے درپیش مسائل اور محرومیوں کے سے بھی شامل کیا جائے گا جو کہ 2020کے انتخابات میں منشور میں بھی شامل کیا جائے گا، سابق صوبائی صدر انصاف سٹوڈنٹس فیڈریشن گلگت بلتستان محمد شاہد نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی گلگت بلتستان کے صوبائی کابینہ کے تشکیل کیلئے مرکزی قیادت نے جلد بازی نہیں کی کیونکہ پارٹی آئین مکمل کرنے کے بعد گلگت بلتستان کے عوام کو بھی ترجیح دی جائے گی اور آئین میں گلگت بلتستان کے ایجنڈے کو بھی شامل کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف گلگت بلتستان کی تنظیم سازی پارٹی آئین کے مکمل ہونے کے بعد کی جائیگی جس میں ایک ہفتے سے زائد دن لگ سکتے ہیں،پاکستان تحریک انصاف نے مرکز میں اقتدار سنبھالنے کے بعد ملک بھر سے روایتی سیاست کا خاتمہ کیا ہے اور اب وقت آگیا ہے کہ پی ٹی آئی کو باقاعدہ سیاسی ادارہ بنا کر ہمیشہ کے لیے روایتی سیاست کا خاتمہ کرے۔جس میں پڑھے لکھے با کردار لوگوں، نوجوانوں اور خواتین کو بھرپور مواقعملیں گے، اس وقت پارٹی اہم مرحلے سے گزر رہی ہے لہذا کارکنان جلد بازی نہ کریں اور کسی بھی قسم کے پروپیگنڈے کا شکار نہ بنیں۔ پاکستان میں روایتی جماعتیں چند افراد کے ہاتھوں یرغمال ہیں اور وہی افراد تا حیات عہدیدار بنے بیٹھے ہیں۔ پی ٹی آئی اس طرز سیاست کا ہمیشہ کے لیے خاتمہ کریگی اور 2020میں گلگت بلتستان میں عوامی مینڈیٹ کے ساتھ حکومت بنا کر مک مکا کا خاتمہ کریگی،رکن پاکستان تحریک انصاف آئین ساز کمیٹی ایڈووکیٹ آمنہ انصاری نے کہا کہ پی پی پی اور ن لیگ آخری سانسیں لے رہی ہیں اور ان کے کرپٹ قائدین کو ملک بھر کی طرح گلگت بلتستانمیں بھی احتساب کے کٹہرے میں لاکر کھڑا کریں گے اور ملک کے خزانے کو لوٹنے والے جماعتوں کو ہمیشہ کیلئے دفن کیا جائے گا، رکن پاکستان تحریک انصاف آئین ساز کمیٹی ایڈووکیٹ آمنہ انصاری نے کہا کہ گلگت بلتستان میں سابقہ حکومتوں نے عوام کے لیے کچھ نہیں کیا اقتدار میں آنے کے بعد اسلام آباد کے طرف رخ کیا اور جائیدادیں بنوانے لگے لیکن ان کے تمام کرپشن کے فائلوں کو احتساب عدالت کے سامنے کھولا جائے گا اور ان کو عوام کے سامنے بے نقاب کیا جائے گا۔

تازہ ترین خبریں