05:45 pm
فوج دشمن سے نمٹنے کیلئے تیارہے(وزیراعلیٰ،فورس کمانڈر)(شہدائے گیاری کے لواحقین میں ملازمتوں کے آرڈر تقسیم)

فوج دشمن سے نمٹنے کیلئے تیارہے(وزیراعلیٰ،فورس کمانڈر)(شہدائے گیاری کے لواحقین میں ملازمتوں کے آرڈر تقسیم)

05:45 pm

گلگت (کرن قاسم سے) وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے سانحہ گیاری کے شہداء کے ورثاء کوملازمتوں کی فراہمی کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ پاک فوج اندرونی اور بیرونی تمام دشمن طاقتوں سے نمٹنے کے لئے ہمہ وقت تیار ہے جس پر پوری قوم کو اعتماد ہے گیاری میں پاک فوج کی قربانیوں پر قوم کو فخر ہے ۔سابق وزیر اعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف نے سانحہ گیاری کے ورثاء کو اپنی ذاتی دلچسپی پر معاوضے اور ملازمت دینے کا اعلان کیاتھا مسلم لیگ ن کی حکومت نے سانحہ گیاری کے شہداء کے لواحقین سے جو وعدے کئے تھے آج ان کو عملی جامہ پہنایا گیا۔
سانحہ گیاری کے لواحقین کو ملازمتوں کے آرڈر تقسیم کئے انہوںنے مزید کہاکہ سابق وزیر اعظم سانحہ گیاری کے بعد خود سکردو آئے اور شہداء کے لواحقین کے ساتھ ہمدردی کااظہار کیا اور لواحقین میں پانچ ،پانچ لاکھ روپے کے چیک تقسیم کئے اور ایک ایک ملازمت دینے کا اعلان کیاتھا جیسے ہی گلگت بلتستان میں مسلم لیگ ن کی حکومت بنی تب مسلم لیگ ن گیاری کے شہداء کو ملازمتیں دینے کے لئے اپنا کردار ادا کیا اور آج سانحہ گیاری کے لواحقین میں ملازمتوں کے آرڈر تقسیم کئے۔ انہوںنے کہاکہ گلگت بلتستان کا سب سے بڑا مسئلہ امن و امان کا تھا پاک فوج سمیت دیگر اداروں کے تعاون سے پائیدار امن کے قیام میں کامیاب ہوئے ہماری اگلی منزل ترقی ہے خطے کی تعمیروترقی کے لئے تمام اداروں کی شراکت سے بھرپور اقدامات اٹھائینگے۔ فورس کمانڈر گلگت بلتستان جنرل احسان محمود نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ پاکستان شہیدوں کی سرزمین ہے پاکستان کی آبپاری شہیدوں کے لہو سے ہورہی ہے شہیدوں کے لہو سے مقدس کوئی چیز نہیں جب سے پاکستان بنا کراچی سے خنجراب تک سانحہ گیاری میں 140 نوجوان شہید ہوئے جن میں 72 کا تعلق گلگت بلتستان سے تھا پاک آرمی اپنے شہداء کو کبھی نہیں بھولے گی اور شہداء کے لواحقین کے ساتھ بھرپور تعاون کرتی رہے گی۔ سانحہ گیاری کے شہداء کے لواحقین میں ملازمتوں کے آرڈر تقسیم کئے گئے جبکہ 17 کے قریب لواحقین کو عیدالفطر تک ملازمتوں کے آرڈر فراہم کئے جائینگے ملک میں امن وامان کو برقرار رکھنے کے لئے شہداء نے شہادتیں دئیے اور امن کے لئے ہی کراچی سے خنجراب تک شہادتوں کا سلسلہ جاری ہے۔ ملک خاص کر گلگت بلتستان میں امن کو قائم رکھنے کے لئے تمام وسائل کو بروئے کار لایا جائے گا امن کے ساتھ ہی علاقے کی تعمیروترقی اور عوام میں خوشحالی آتی ہے گلگت بلتستان اور پاکستان کا رشتہ سر اور دھڑ کا ہے اور یہ رشتہ ہمیشہ قائم رہے گا۔ تقریب میں سانحہ گیاری کے شہداء کے ورثاء سیاسی و سماجی حلقوں سمیت عسکری حکام نے شرکت کی۔ گلگت (خبر نگار خصوصی) فورس کمانڈر گلگت بلتستان میجر جنرل احسان محمود نے گیاری کے شہداء کے لواحقین کو گلگت بلتستان کے سرکاری محکموں میں تفرری کے تقرری نامے عطاء کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ شہداء کے لواحقین کی تقرری کے لئے شہداء کا درجہ ہی میرٹ ہے ملک کے سرحدوں کی حفاظت میں شہید ہونے والے شہداء ہمارے قومی اثاثے ہیں ان کی قربانیوں کو ہر گز فراموش نہیں کیاجاسکتا ہے پاکستان کی آبیاری ہی شہداء کے لہو سے ہے پاک فوج شہداء کے ورثا کی فلاح و بہبود کے لئے شانہ بشانہ کھڑی ہے سرکاری محکموں میں شہداء کے لواحقین کے لئے شہید کا درجہ ہی ان کا میرٹ ہے ہمیں اپنے شہداء پر فخر ہے جنھوںنے ملک کے سرحدوں کی تحفظ کرتے ہوئے ہم سے سبقت لے گئے ہیں تقریب میں 53 لواحقین شہداء کو گلگت بلتستان کے مختلف سرکاری محکموں میں تعینات کرکے تقرر نامے لواحقین شہداء کو حوالہ کردیا گیا مزید 17 کو عید الفطر تک تقرری نامے دے دیا جائے گا۔ تقرر ہونے والوں میں شہداء کی بیوائیں ،بیٹے ،بیٹیاں ،بہن ،بھائی ،بہنوی اور سالیاں شامل ہیں جن کے لئے صوبائی حکومت نے خصوصی قانون سازی کرکے تقرریاں عمل میں لائی ہے تقریب میں وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان ،وزراء ،افواج پاکستان کے آفیسران اور لواحقین شہداء ،چیف سیکریٹری نے شرکت کردی۔گلگت (محمد ذاکرسے ) وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہاہے کہ چند لوگ زمینوں کے نام پر عوام کو گمراہ کرکے گلگت بلتستان کے امن کو سپوتاز کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ تعمیروترقی کے خلاف سازشیں کرنے والوں کے عزائم ناکام بنادیں گے عوام خطے کے پائیدار قیام امن کے لئے آپس میں بھائی چارگی ماحول کے فروغ کے لئے اپنا کلیدی کردار ادا کریں۔ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے ان خیالات کااظہار جشن بہاراں پولو ٹورنامنٹ کے فائنل تقریب میں بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوںنے کہاکہ پولو کھیل شاہین شاہوں کا کھیل ہے تاریخی و قدیمی کھیل گلگت بلتستان کی ثقافتی حصہ بن گیا ہے۔ حکومت نے پولو کھیل سمیت دیگر کھیلوں کے لئے خطے میں معیاری گراونڈ بنانے کے لئے بجٹ مختص کردیا ہے۔ بہت جلد گلگت آغاخان شاہی پولو گراونڈ کو اسٹیڈیم بنایا جائے گا اور گراونڈ کی معیاری تعمیر کو بھی یقینی بنایا جائے گا ہار جیت کھیل کا حصہ اور کھیل کو انا کا مسئلہ بنانے کے بجائے کھیلوں کے ذریعے پائیدار قیام امن کے لئے بھائی چارگی ماحول کو فروغ دیتے ہوئے اپنا کلیدی کردار ادا کریں۔ انہوںنے کہاکہ شندور گلگت بلتستان کا حصہ ہے اس بار شندور پولو جیتنے کے لئے ہر ممکن اقدامات کئے جائیں گے اور بہترین ٹیم سلیکشن کے لئے میرٹ یقینی بناتے ہوئے کمیٹی تشکیل دی جائے گی۔ انہوںنے کہاکہ پولو کھیل گلگت بلتستان کا ثقافت بن گیا ہے آغاخان شاہی پولو گروانڈ میں نائٹ ویژن کے لائٹ لگا کر رات کو بھی پولو ٹورنامنٹ یقینی بنائیں گے جبکہ گراونڈ کے چاروں اطراف سی سی ٹی وی کیمرے بھی نصب کئے جائیں گے تاکہ ماضی کی طرح شر پسند فساد کے ذریعے پرامن ماحول کو خراب نہ کر سکیں۔ انہوںنے گلگت پولو ایسوسی ایشن کی نومنتخب صدر افتخار احمد و پوری کابینہ کو مبارکباد پیش کی اور بہترین اور کامیاب ایونٹ کے اختتامی کارکردگی کو سراہا۔ آخر میں مہمان خصوصی وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے ونر، رنر مین آف دی میچ اور بہترین گھوڑے کے انعامات کھلاڑیوں میں تقسیم کردئیے ۔پولو ایسوسی ایشن گلگت کے صدر افتخار احمد اور سیکریٹری جنرل پرویز میر نے وزیر اعلیٰ کو فائنل تقریب آمد اور میگا ایونٹ کو کامیاب بنانے کے لئے حکومتی سطح پر تعاون کرنے پر شکریہ ادا کیا۔گلگت ( اوصاف نیوز ) وزیراعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا ہے کہ پوری قوم کو اپنے افواج پر فخرہے ہماری فوج ملک کے سرحدوں کے تحفظ اور دہشت گردی کے خلاف آج بھی قربانیاں دے رہی ہے ہم سلام پیش کرتے ہیں اپنے شہداء کو اور زندہ قومیں اپنے شہدا کی قربانیاں کبھی نہیں بھولتی ہیں ہم اپنے شہداء کی قربانیوں کو ہمیشہ یاد رکھئینگے۔ 2012کے بعد ہر سال گیاری کے شہدا کو خراج عقدیت پیش کرنے کے لئے تقریب کا انعقاد کیا جاتا ہے۔وزیراعلیٰ نے کہا ہے کہ گیاری سانحے کے بعد مسلم لیگ(ن) کے قائد محمد نواز شریف گلگت بلتستان آئے تمام شہداء کے گھر گیے اور ورثاء سے ہمددری کا اظہار کیا اس وقت مسلم لیگ (ن) کے قائد محمد نواز شریف ملک کے وزیر اعظم نہیںتھے لیکن پنجاب میں مسلم لیگ (ن) کی حکومت تھی۔ سابق وزیر اعظم محمد نواز شریف نے شہداء گیاری کے ورثاء کو5لاکھ اور سرکاری ملازمت دینے کا وعدہ کیا ۔ جسکے بعد حکومت پنجاب کی جانب سے شہداء گیاری کے ورثاء کو 5لاکھ روپے دیے گیے لیکن چند قانونی پیچدگیوں کی وجہ سے سرکاری ملازمت کے تقررنامے دینے میں تاخیر ہوئی۔ گلگت بلتستان کابینہ نے شہداء کے ورثاء کو سرکاری ملازمت دینے کیلئے وزیراعلیٰ اسسٹنٹ پیکیج میں ضروری ترامیم کی اور آج شہداء گیاری کے ورثاء کو سرکاری ملازمت کے تقررنامے دے رہے ہیں ۔ ان خیالات کا اظہار وزیراعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے شہداء گیاری کے ورثاء میں سرکاری ملازمتوں کے تقررنامے دینے کے حوالے سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ آج بھی ہماری سپوت ملک کی دفاع اور دہشت گردی کے خلاف اپنی جانوں کی قربانیاں دے ہیں ۔ ہم سلام پیش کرتے ہیں اپنے شہداء اور غازیوں کو ہماری فوج کے جوان ملک کے استحکام اور ترقی اور نظریہ استحکام پاکستان کیلئے قربانیاں دے رہی ہیں ۔ ہماری بھی ذمہ داری ہے کہ ہم جس عہدے پر بھی ہیں اپنے فرائض ایمانداری، دیانتداری اور ملک کی ترقی و خوشحالی کیلئے سر انجام دیں وزیراعلیٰ نے گلگت بلتستان کی تعمیر و ترقی اور امن کیلئے جو کردار ادا کیا ہے اس پر خراج تحسین پیش کرتے ہیں افواج پاکستان اور اداروں کے تعاون سے گلگت بلتستان ایشیاء کا پر امن خطہ بن گیا ہے اب ہم سب نے مل کر ترقی کے اس سفر کو آگے بڑھانا ہے۔

تازہ ترین خبریں