06:07 pm
نفرت انگیزتقاریرپرپابندی عائد(نیشنل ایکشن پلان پرعملدرآمدتیزکرنے کی ہدایت)

نفرت انگیزتقاریرپرپابندی عائد(نیشنل ایکشن پلان پرعملدرآمدتیزکرنے کی ہدایت)

06:07 pm

گلگت( بیورورپورٹ) نیشنل ایکشن پلان کے تحت گلگت بلتستان میں منافرت اور نفرت انگیز تقاریر پر پابندی عائد کردی گئی، عوامی اجتماعات اور سوشل میڈیا میں نفرت انگیز تقاریر اور منافرت پھیلانے والوں کے خلاف سخت پابندی عائد کرتے ہوئے فوری طور پر سخت قانونی کاروائی کی ہدایت کردی گئی ہے ۔ ذرائع کے مطابق نفرت انگیز تقاریر اور منافرت پھیلانے والی گفتگو پر ابھی تک 119افراد کو گرفتار کیا جاچکا ہے
جن میں سے 46 افراد کے خلاف کیس رجسٹرڈ ہوچکی ہے۔ذرائع کے مطابق نفرت انگیز تقاریر اور منافرت پر مبنی گفتگو کے واقعات میں 2015سے اب تک مسلسل کمی دیکھنے کو ملی ہے، 2015 میں 36 افراد کو گرفتار کیا گیا تھا جن میں سے 19پر کیس رجسٹرڈ کیاگیا، 2016میں 68افراد کو گرفتار کیا گیا تھا تاہم صرف 15افراد کے خلاف کیس رجسٹرڈ کیا گیا۔2017 میں کل 13افراد کو گرفتا رکرلیا گیا جن میں سے 7افراد پر کیس رجسٹرڈ کردی گئی۔2018 میں تین افراد کے خلاف کیس رجسٹرڈ کیا گیا جبکہ صرف ایک کو گرفتار کیا گیا ۔ رواں سال 2 افراد کے خلاف نفرت انگیز تقریر اور منافرت پھیلانے کا کیس رجسٹرڈ کیاگیا جن میں سے ایک گرفتار کیا جاچکا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ منافرت پھیلانے اور نفرت انگیز تقاریر کرنے والوں پر کیس رجسٹرڈ کرنے کے بعد شفاف ٹرائل ہوتا ہے ، اور جرم ثابت ہونے والوں کے خلاف سخت سزا دینے کی ہدایت کردی گئی ہے۔

تازہ ترین خبریں