06:14 pm
پیپلزپارٹی جی بی میں ڈھونڈنے سے نہیں ملتی،اپنی فکرکریں،فتح اللہ خان

پیپلزپارٹی جی بی میں ڈھونڈنے سے نہیں ملتی،اپنی فکرکریں،فتح اللہ خان

06:14 pm

گلگت (اوصاف نیوز) سیکریٹری جنرل پاکستان تحریک انصاف گلگت بلتستان فتح اللہ خان کا میڈیا کو جاری کردہ اپنے ایک بیان میں کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی گلگت بلتستان کے زمہ داران تحریک انصاف کی فکر چھوڑیں اپنی پارٹی کی فکر کریں پیپلز پارٹی ملک بھر کی طرح گلگت بلتستان میں بھی ناپید ہوچکی ہے جس کی گلگت بلتستان کے اندر کوئی حیثیت باقی نہیں امجد ایڈوکیٹ نے پارٹی کو اخبارات کی حد تک زندہ رکھا ہوا ہے
پیپلز پارٹی گلگت بلتستان کی ترجمان کے پاکستان تحریک انصاف گلگت بلتستان کے حوالے سے دیے گئے بیان پر ردعمل دیتے ہورے فتح اللہ خان کا کہنا تھا کہ پی پی والوں کو اپنی پارٹی کی فکر کرنی چاہیے وہ گلگت بلتستان میں نایاب ہوچکے ہیں ڈھونڈنے پر بھی نہیں ملتے ان کی تعداد انگلیوں پر گنی جا سکتی ہے اور ان کی دوسروی پارٹیوں پر تنقید احمقانہ فعل ہے پاکستان تحریک پورے ملک میں سب سے بڑی جماعت ہے پیپلز پارٹی کو کارکردگی کی بنیاد پر اگر ووٹ پرٹے تو پیپلز پارٹی یونین کونسل کی نشست بھی نہیں جیت سکتی بھٹو صاحب مرحوم کو زندہ بتا کر سند کی عوام سے ان کے نام پر ووٹ لیا گیا پچھلے 50 سالوں سے حکومت میں رہ کر تھر کو بنیادی حقوق نہ دے سکنے والوں کی تنقید ماورائے عقل بات ہے گلگت بلتستان میں نوکریوں کی بولی اور سیل لگانے والے گلگت بلتستان میں رنگ نسل اور فرقہ وارانہ بنیادوں پر گلگت بلتستان میں بھائی کو بھائی سے لڑانے اور حفیظ الرحمن کو منافقانہ تقریر اور پالیسیوں کے زریعے وزیر اعلی بنا کر پاکستان تحریک انصاف کے خلاف بیان بازی کرنا پیپلز پارٹی کی قیادت کی منافقانہ زہنیت کی عکاسی ہے پیلپز پارٹی نے لیگی حکومت کے خلاف ہمیشہ فرینڈلی اپوزیشن کی حفیظ سرکار سے نوکریوں اور ٹھیکوں میں پچھلے چار سال پرسنٹیج لینے والی پیپلز پارٹی کا خد کو سیاسی پارٹی کہنے کا کوئی اخلاقی جواز نہیں بنتا گلگت بلتستان کی تعمیر و ترقی کو پیپلز پارٹی اور ن لیگ نے اپنے اپنے ادوار میں ملی بھگت کے زریعے تباہ کر کے رکھ دیا تحریک انصاف کی مقبولیت سے خوفزدہ پی پی اور لیگی کرپٹ مافیا کا ہر صورت کرا احتساب کرینگے ان دونوں پارٹیوں نے اپوزیشن میں ایک دوسرے کے خلاف اپوزیشن کے نام پرعوام کے ساتھ مزاق کیا پیپلز پارٹی حفیظ الرحمن کی اسمبلی کے اندر اور باہر محافظ بنی ہوئی ہے گلگت بلتستان کی عوام میں شعور آچکا ہے عوام کو تعلیم یافتہ اور وڑن رکھنے والی لیڈر شپ چاہیے نہ کہ پی پی اور لیگی حکومت کی طرح فرسودہ نظام کے بقیہ جات, عوام انتخابات میں کرپٹ عناصر کا احتساب کریگی ان کا حال بھی انکے مرکزی قائدین کی طرح جیلون میں ہوگا عوام کی لوٹی ہوئی پائی پائی کا حساب لینگے۔

تازہ ترین خبریں