05:42 pm
گلگت سکردوروڈکی تعمیر،ایف ڈبلیواوکی عوام کے تحفظات دورکرنیکی یقین دہانی

گلگت سکردوروڈکی تعمیر،ایف ڈبلیواوکی عوام کے تحفظات دورکرنیکی یقین دہانی

05:42 pm

گلگت(اوصاف نیوز)ڈپٹی کمشنر آفس میں گلگت سکردو روڈ کی تعمیر کے درمیان راستے میں آنے والی کلوٹس کے مسئلے کے حل کے حوالے سے ایک اہم اجلاس ہوا جس میں FWOکے نمائندہ گان، سول سوسائٹی کے ارکین اور عمائدین علاقہ نے شمولیت اختیارکی۔ اجلاس میں FWOکی جانب سے شرکاء کو کلوٹس کی تعمیر کے حوالے سے ڈرائنگ اور ڈیزائننگ کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی گئی اور کلوٹس کی تعمیر کے معاملے میں گلگت بلتستان میں
پہلی مرتبہ استعمال ہونے والی ٹیکنالوجی سائفن کے استعمال کے حوالے سے تفصیلی طور پر آگاہ کیا گیا ۔ FWOکے ذمہ داران کا کہنا تھا کہ یہ ٹیکنالوجی جو زمینی حقائق ہے اُن کو مدنظر رکھتے ہوئے اختیارکی جارہی ہے اور پوری دنیا میں کامیابی کے بعد اس کو پاکستان کے مختلف حصوں میں بھی متعارف کرایا جا چکا ہے اور یہ ہمیشہ کامیاب ثابت ہو ئی ہے اُ سکی کامیابی کو مد نظر رکھتے ہوئے اس کو پہلی مرتبہ بلتستان میں بھی یہاں پے متعارف کرایا جا رہا ہے تاکہ روڈ کی ایک جیسے لیولنگ کے ساتھ ساتھ کسانوں کے لئے پانی کی فراہمی کو یقینی بنایا جا سکے ۔اُ ن کا کہنا تھا کہ FWOکی بھر پور کوشش ہے کہ عوامی امنگوں کے مطابق روڈ کی تعمیر اور اس تعمیرکے سلسلے میں دیگر اہم حصے ہیں اُن کویقینی بنایا جا سکے ۔جبکہ اجلاس میں شرکاء ، عمائدین اور سول سوسائٹی کے اراکین کا اپنے خدشات پیش کرتے ہوئے کہنا تھا کہ کلوٹس کی گہرائی زیادہ ہونے کی وجہ سے اُن کو خدشہ ہے کہ پانی اُن کی کھیتوں تک نہیں پہنچ پائے گا جس سے اُن کو کافی زیادہ نقصانات کا سامنا کرنا پڑ سکتاہے۔ اُن کاکہناتھا کہ کلوٹس کی تعمیر کے دوران اُن کی گہرائی کو کم کرکے لیول بلند کرنے کی ضرورت ہے تاکہ باآسانی اُن کی فصلوں تک پانی پہنچ سکے۔ جبکہ اجلاس میں آپس میں تفصیلی گفت و شیند کرنے کے بعد جو چیزیں طے پائی اُن میں ایک چیز یہ شامل تھی کہ FWOکی جانب سے عوام کی رائے کے مطابق یہ بھی وہاں پر فیصلہ کیا گیا کہ عوامی رائے کو مدنظر رکھتے ہوئے جو عوام فیصلہ کرے گی اُسی ایک کلوٹ کو ماڈل کلوٹ کے طور پر لیاجائے گا اور اُس کو جلد از جلد مکمل کیاجائے گا جس کی کامیاب تجربے کے بعد دوسری کلوٹس ہوں گی اُن کو مکمل کرایا جائے گا۔مزید برآں FWOکی جانب سے اس چیز کے ساتھ بھی اتفاق کیا گیا کہ جہاں جہاں پے سیلابی کلوٹس تعمیرنہیں کئے جا سکے وہاں پے NHAسے بات چیت کرنے کے بعد سیلابی کلوٹس کی تعمیر کو بھی یقینی بنایا جائے گااور ایسے تمام مقامات جہاں پر پہلے دو کلوٹس ساتھ موجود تھی تو ایسی تمام جگہوں پر اُن دونوں کلوٹس کی تعمیرکو یقینی بنایا جائے گا۔مزید برآں گلگت سکردو روڈ کی تعمیر کے دوران جو گرد اُڑنے کا معاملہ تھا اُس حوالے سے بھی FWOکی جانب سے نہایت ہی مثبت رسپانس دیکھنے میں آیا اور FWOکے ذمہ داران کا کہناتھا کہ وہ پانی کی بوزرہے اُن کی تعداد پہلے بڑھا چُکے ہیں جبکہ اس میں مزید اضافہ کیا جائے گاتاکہ عوام کو کم سے کم دقت کا سامنا کرنا پڑے۔ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر سکردو کا کہنا تھا کہ عوامی امنگوںکے مطابق کلوٹس کے معاملے کے حل کو یقینی بنایا جائے گا اور آج کی اس اجلاس میں FWOاور عوام کا جو رسپانس تھا وہ کافی زیادہ مثبت دیکھنے میں آیا ہے دونوں نے بڑے تحمل اور برداشت کے ساتھ ایک دوسرے کی بات سُنی ہے اور اس نتیجے پر پہنچے ہیں کہ مل بیٹھ کر معاملات کے حل کو یقینی بنایا جائے گا اور عوام اپنا تمام ممکنہ تعاون FWOکے ساتھ یقینی بنائیں گے تاکہ جلد از جلد روڈکی تعمیر اور کلوٹس کے معاملے کو حل کیا جا سکے۔

تازہ ترین خبریں