05:51 pm
گلگت بلتستان کے ماڈل سکولوں میں من پسنداساتذہ کی تقرریوں کاسلسلہ شروع

گلگت بلتستان کے ماڈل سکولوں میں من پسنداساتذہ کی تقرریوں کاسلسلہ شروع

05:51 pm

گلگت( بیورورپورٹ) جی بی میں ماڈل سکولوں میں من پسند اساتذہ کی تقرریوں کا سلسلہ شروع ہوگیا، صرف بااثر اساتذہ ہی ماڈل سکولوں میں تعینات ہونے لگ گئے،اندرون خانہ ساز باز کی وجہ سے نوٹیفکیشن پر نوٹیفکیشن جاری ،گلگت بلتستان میں ماڈل سکولوں کانعرہ ہوائی ثابت ہوگیا،محکمہ تعلیم جی بی کی جانب سے معیار تعلیم کے بہتری کے لئے ماڈل سکولوں کے قیام کا فیصلہ کیا گیا تھا جس کے لئے سکول میں نصاب تعلیم، نظام تعلیم اور انفراسٹرکچر میںتبدیلی کا عندیہ دیا گیا تھا
، عمومی سکولوں کی ماڈل سکول میں اپ گریڈیشن کے لئے فیس اور الگ رجسٹریشن کا نظام بھی مقرر کردیا گیا ۔ ذرائع کے مطابق ماڈل سکولوں میں سوائے فیس اضافے، وردی میں تبدیلی اور کینٹین جیسی چند ایک غیر ضروری تعمیرات کے علاوہ کسی بھی قسم کے تعلیمی اقدامات نہیں اٹھائے گئے ہیں جبکہ ماڈل سکولوں میں تعیناتی کے لئے من پسند اور سفارشی افراد کی فہرست پر کام ہورہا ہے، ماڈل سکولوں میں امتحانی طریقہ کار کے لئے کوئی بھی نظام وضع نہیں ہوپانے کی وجہ سے روایتی طور پر انٹر اور سیکنڈری سکول بورڈ کو ہی امتحانی زمہ داریاں تفویض کردی گئی ہیں۔ ماڈل سکولوں کے قیام کے بعد طلبہ و طالبات سے طرح طرح کے فیسیں وصول کرنے کی وجہ سے غریب والدین تلملا اٹھے ہیں،جس کی وجہ سے آئے روز سکول میں جھگڑے معمول بن گئے ہیں۔ دلچسپ طور پر فوٹوسٹیٹ اور دیگر سہولیات کے نام پر بھی لاکھوں روپے بٹور لئے گئے ہیں۔ محکمہ تعلیم گلگت بلتستان کو اس حوالے سے آگاہ کرنے کے باوجود حرکت میں نہ آنا ایک سوالیہ نشان بھی ہے۔ ماڈل سکولوں کی سکول منیجمنٹ کمیٹی نے بھی چپ سادھ لی ہوئی ہے ، جس کی وجہ سکول کو الوداع کرنے والے غریب طلبہ و طالبات کی تعداد میں اضافہ ہوتاجارہا ہے۔

تازہ ترین خبریں