06:02 pm
قومی اقتصادی کونسل کااجلاس آج ،وزیراعلیٰ حفیظ الرحمن شرکت کریں گے

قومی اقتصادی کونسل کااجلاس آج ،وزیراعلیٰ حفیظ الرحمن شرکت کریں گے

06:02 pm

گلگت ( اوصاف نیوز ) قومی اقتصادی کونسل کا اجلاس آج منعقد ہوگا جس میں وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن شرکت کریں گے۔ واضح رہے کہ یہ وہ فورم ہے جس میں سابق وزیر اعظم محمد نواز شریف نے گلگت بلتستان کو نمائندگی دی تھی۔ قومی اسمبلی اور کابینہ میں بجٹ پیش کرنے سے قبل قومی اقتصادی کونسل سے منظوری دی جاتی ہے۔ گلگت بلتستان کو قومی اقتصادی کونسل میں نمائندگی ملنے کے بعد
وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے پہلی دفعہ اس فورم میں شرکت کی تھی اس وقت گلگت بلتستان کا ترقیاتی بجٹ ساڑھے 8 ارب تھا قومی اقتصادی کونسل میں وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے گلگت بلتستان کے بجٹ میں اضافے کی بات کی جس پر سابق وفاقی حکومت نے ساڑھے آٹھ ارب کے ترقیاتی بجٹ کو بڑھا کر 13 ارب کردیا اور سالانہ سابق وفاقی حکومت نے گلگت بلتستان ترقیاتی بجٹ کو بڑھا کر 19 ارب کردیا واضح رہے کہ 19 ارب کے صوبے کے ترقیاتی بجٹ میں پی ایس ڈی پی کے منصوبے شامل نہیں ہیں۔ گلگت بلتستان حکومت نے آئندہ مالی سا ل کیلئے 19 ارب کا ترقیاتی بجٹ طلب کیا ہے اور وفاقی وزارت امور کشمیر و گلگت بلتستان نے بھی جس کی تائید کرتے ہوئے گلگت بلتستان کیلئے19 ارب ترقیاتی بجٹ کی سفارش کی ہے۔ پلاننگ کمیشن نے 19 ارب کے بجائے 15 ارب کرنے کہا ہے ۔ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن آج قومی اقتصادی کونسل کے اجلاس میں شرکت کرکے گلگت بلتستان کے ترقیاتی بجٹ اور پی ایس ڈی پی کے منصوبے جو سابق وفاقی حکومت نے منظور کئے تھے ان کو عملی جامعہ پہنانے کیلئے بھرپور آواز اٹھائیں گے۔ گلگت چترال چکدرہ ایکسپریس وے، میڈیکل کالج، بٹوگاہ روڈ، عطاء آباد پاور پروجیکٹ ، غواڑی پاور پروجیکٹ، شغرتھنگ پاور پروجیکٹ، گلگت ، چلاس اورسکردو سیوریج سسٹم، دیامر ٹیکنیکل کالج کیلئے وفاقی حکومت کی جانب سے روکے جانے والے بجٹ کو فوری طور پر ریلیز کرنے کی بات کریں گے۔ واضح رہے کہ ان میں سے بیشتر سکیمیں سابق وفاقی حکومت نے منظور کئے ہیں جس کا بجٹ موجودہ حکومت نے روک دیا ہے۔

تازہ ترین خبریں