04:53 pm
آنیوالی نسلوں کو تمباکوسے پاک معاشرہ فراہم کرناسب کی ذمہ داری ہے(عمران علی،،امرخان)

آنیوالی نسلوں کو تمباکوسے پاک معاشرہ فراہم کرناسب کی ذمہ داری ہے(عمران علی،،امرخان)

04:53 pm

گلگت (جونیئر شگری سے ) KIU ایڈونچر کلب اورمعروف سماجی تنظیم سیڈو گلگت بلتستان کے اشتراک سے دنیا کی خوبصورت ترین سیاحتی مقام سطح سمندر سے 3300میٹر کی بلندی پر ’’فیریمیڈوز‘‘ میں تین روزہ یوتھ کانفرنس کا انعقاد کیا گیا۔ جس کا مقصد نوجوانوں اور کم عمر بچوں کو سگریٹ کے نقصانات اور ملکی قوانین کے بارے میں آگاہ کرنا تھا۔جس میں قراقرم انٹرنیشنل یونیورسٹی کے مختلف شعبہ جات کے طلبہ و طالبات اور
دیگر حاضرین نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔طلباء اس طرح کے پروگرامات میں زیادہ سے زیادہ حصہ لیں تاکہ لیڈر شپ کی صلاحیتوں میں اضافہ ہوسکے ۔طلباء صرف نصابی سرگرمیوں پر اکتفاء نہ کرے بلکہ اس طرح کے ہائیکنگ پروگرامات،یوتھکانفرس میں اپنا حصہ ڈالے تاکہ شخصیت سازی میں نکھار پید ا ہوجائے ۔ان خیالات کا اظہار نوجوانوں سے خطاب کرتے ہوئے صدر ایڈونچر کلب کے آئی یو عمران علی کہا کہ اللہ تعالی نے ملک خداد پاکستان کو بے شمار نعمتوں سے نوازا ہے۔ اب یہ نوجوانو ں کی ذمہ داری ہے کہ ان نعمتوں کو بروئے کار لاتے ہوئے اس ملک کی تعمیر و ترقی میں اپنا کردار ادا کریں۔کہ گلگت بلتستان کی نوجوان نسل اپنے وسائل کو بروئے کار لاتے ہوئے پاکستان کی ترقی اور قیام امن کے عمل میں بھرپور طریقے سے اپنا کردار ادا کر رہی ہے سیڈو کے گلگت بلتستان میں سموک فری مہم شروع کے campaign ambassador رینگچن محمد امر خان شگری اور دیگر نے تمباکو نوشی کی تباہ کاریوں پرتفصیل سے روشنی ڈالیں گے اور کہا کہ۔ا س مقصد کے لئے معاشرے کے ہر فرد کو کردار ادا کرنے کی ضرورت ہے نوجوان طلباء اس میں اہم اور کلیدی کردار ادا کر سکتے ہیں۔آنیوالی نسلوں کوتمباکوسے پاک معاشرہ فراہم کرناسب کی ذمہ داری ہے۔نوجواں مستقبل کے معمار ہیںہم سب پر ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ آنے والی نسلوں کو تمباکو سے پاک معاشرہ فراہم کریں ۔اس مقصد کے لئے معاشرے کے ہر فرد کو کردار ادا کرنے کی ضرورت ہے نوجوان طلباء اس میں اہم اور کلیدی کردار ادا کر سکتے ہیںاس موقع پر سیڈو کے اغراض مقاصد کے بارے میں بھی طلبہ و طالبات کو آگاہی دی گئی ۔جو لوگ مستقل سگریٹ نوشی کی عادت میں مبتلا ہیں ان کے لئے میراپیغام ہے کہ اس عادت کو ابھی ترک کردیں‘‘ عموماً لوگ سگریٹ نوشی سے متعلق جاری کئے جانے والے انتباہات کو سنجیدگی سے نہیں لیتے لیکن ان کو اندازہ نہیں ہے کہ سگریٹ نوشی کے انسانی صحت پر کس قدر مضر اثرات مرتب ہوتے ہیں ۔جس سے خطاب کرتے ہوئے مقرریندنیا بھرمیں تمباکو کے استعمال سے اموات میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے، پاکستان میں تمباکو نوشی پر کنٹرول کے دعوے تو کئے جاتے ہیں لیکن اس میں خاطر خواہ کامیابی نہیں نظرنہیں آرہی ہے۔ سگریٹ، بیڑی، سگار، پان، نسوار اور دیگر کئی طرح سے تمباکو کے استعمال سے منہ، حلق اور پھیپھڑوں کا سرطان پھیلتا ہے۔ تحقیق سے ثابت ہوگیا ہے کہ نوے فیصد سرطان کی وجہ تمباکو نوشی ہے۔پاکستان میں تمباکو نوشی سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد میں ہرسال اضافہ ہورہا ہے،جبکہ دنیا بھرمیں اس ماہرین کا خیال ہے کہ ایسے تصویری پیغامات سے تمباکو نوشی کے خلاف عوام میں شعور بیدار کرنے میں مدد ملتی ہے۔ اگرچہ عوامی مقامات میں سگریٹ نوشی پر عائد پابندی کے نفاذ کیلئے حکومت کی جانب سے وقتا فوقتا اقدامات کیے جا رہے ہیں۔ تاہم تاحال ان پر موثر عمل درآمد ممکن نہیں ہو سکا۔آخر میں سیمینا ر کے شرکاء اور سیمیناز کے رضاکاروں میں شیلڈز او ر سرٹیفیکیٹ بھی تقسیم کئے گئے ۔ سیڈوکی جانب سے سیمنار کا کوآرڈینٹر شعبہ ابلاغیا ت کے طلبا رینگچن محمد امر خان جونیئر شگری تھے۔ طلبا نے سیڈ و کے اس آگاہی مہم کو پر چار کرنے کے عز م کا اظہار کیا۔

تازہ ترین خبریں