05:18 pm
بارشوں کے باعث لینڈسلائیڈنگ،شاہراہ قراقرم مختلف مقامات سے بند(ملبہ ہٹانے کاکام جاری)

بارشوں کے باعث لینڈسلائیڈنگ،شاہراہ قراقرم مختلف مقامات سے بند(ملبہ ہٹانے کاکام جاری)

05:18 pm

چلاس(ڈسٹرکٹ رپورٹر) حالیہ بارشوں سے لینڈ سیلاڈنگ اور سیلاب کی وجہ سے شاہراہ قراقرم مختلف مقامات پر بند۔گونرفارم کے مقام گندلو سے رائکوٹ لال پڑی تک مٹی کے تودے گرنے سے شاہراہ قراقرم میں ملبے کے پہاڑ کھڑے ہو گئے۔ملک کے دیگر شہروں کو سفر کرنے والے ہزاروں مسافر اور سیاح مشکلات کا شکار۔ایف ڈبلیو اور ڈیزاسٹر مینیجمنٹ اتھارٹی دیامر نے کے کے ایچ سے ملبہ ہٹانے کا کام جاری کر دیا۔
روڈ کو ہر قسم کی ٹریفک کیلیے کھولنے کے لئے کوشش تیز آج روڈ کھلنے کا امکان۔تفصلات کے مطابق اتوار اور پیر کی درمیانی شب اچانک تیز بارش کی وجہ سے شاہراقرام گونر فارم اور رائکوٹ کے درمیان مختلف مقامات پر مٹی کے تودے گرنے اور سیلاب کی وجہ سے بند ہو گئی جس کی وجہ سے سیاح اور مقامی لوگوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑا جب کہ ایف ڈبلیو اور ڈیزاسٹر مینیجمنٹ اتھارٹی دیامر نے روڈ کو ہر قسم کا ملبہ سے پاک کرنے کے لئے ہیوی مشینری سے کام کا آغاز کر دیا ہے ذرائع کے مطابق لینڈ سلائڈنگ زیادہ ہونے کی وجہ سے روڈ بحالی میں مزید وقت لگے گا اور آج شام تک روڈ کو ہر قسم کی ٹریفک کے لئے بحال کرنے کے لئے کوشش تیز کر ڈی گئی ہیں۔ کا دورہ۔ ڈپٹی سپیکر جی بی اسمبلی جعفراللہ وزیر گلگت بلتستان بلدیات فرمان علی رانا اور ممبر اسمبلی راجہ جہانزیب نے مختلف ترقیاتی منصوبوں میں جاری کام کا جائزہ لیا۔مگر اس اہم دروہ کو ای ٹی آئی دیامر نے مقامی صحافیوں اور عوام سے لاعلم رکھا۔تاکہ ادارے کے اندر ہونے والی مبنیہ کریشن اقرباپروری اور ناقص منصوبہ بندی کا راز فاش نہ ہو۔اور سٹینڈنگ کمیٹی برائے ایگریکلچرل کے سامنے محکمے کی بگڑتی ہوئی صورتحال پر پردہ داری ہو۔ یاد رہے کہ ای ٹی آئی دیامر (ایفاد)اپنے اہداف کو حاصل کرنے میں بری طرح ناکام ک ہوچکے ہے۔ادارے کے ذمے داروں نے مقامی ہنر مند افراد کو دیوار سے لگا کراپنے رشتہ داروں کو نوازا۔جس کء وجہ سے عوام اور پڑھے لکھے نوجوانوں کو سخت غم وغصہ پایا جاتا ہے۔جب کہ سٹینڈنگ کمیٹی برائے ایگریکلچرل کا حالیہ دورہ سے صحافیوں اور عوام کو مکمل طور پر لاعلم رکھنا ای ٹی آئی دیامر کی محکمانہ غفلت اور لاپرواہی چھپانے کی ناکام کوشش ہے۔

تازہ ترین خبریں