11:07 am
بلتستان یونیورسٹی کی باؤنڈری وال کے ٹینڈر میں کسی قسم کی بے ضابطگی ..

بلتستان یونیورسٹی کی باؤنڈری وال کے ٹینڈر میں کسی قسم کی بے ضابطگی ..

11:07 am

گلگت: بلتستان یونیورسٹی کے ترجمان نے گزشتہ روز مقامی اخبار میں شائع یونیورسٹی باؤنڈری وال کے ٹینڈر میں بے ظابطگی سے متعلق رپورٹ کو من گھڑت اور بے بنیاد قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس ٹینڈر کاعمل روز اول سے پیپرا رولز کے مطابق لایا گیا ہے۔ ٹیکنیکل بڈز کھلنے کے بعد چار عدد فرمز نے کوالیفائی کیا تھا، جنکی فائنانشل بڈز کھولنے کے لئے رولز کے تحت گریونس کے لئے ٹائم رکھتے ہوئے اسلام آبادکیمپ آفس میں تمام کوالیفائی کرنے والے ٹھیکیدار وںکو تحریری اطلاع دی گئی تھی جس کے لئییونیورسٹی کاعملہ اور پرنسپل آفیسرز یونیورسٹی کی سینیٹ کی میٹنگ کے لیے اسلام آباد میں موجود رہے۔
 
قانون کے مطابق کسی بھی بڈ کو کھلنے کے لیے جگہ اور وقت کا اِنتخاب کلائنٹ کی مرضی اور سہولت کے تحت ہوتا ہے۔ جسکی تحریری اطلاع بڈرز کو دیجاتی ہے۔فائنانشل بڈز کھلتے وقت تمام ٹھیکیداران کے نمائندے موجود تھے جنکو سربمہر لفافے دکھا کر کھولے گئے اور انکے درج کردہ ریٹس پڑھ کر سنائے گئے اور تمام نمائندگان سے دستخط بھی لئے گئے اور ٹینڈر کھلتے وقت کسی قسم کا اعتراض سامنے نہ آیا۔بعدازاں تمام فائنانشل بڈز تقابلی موازنے اور حتمی رپورٹ بنانے کے لیے کراچی کنسلٹنٹ کو روانہ کر دی گئیں۔ ترجمان نے مزید کہا کہ ٹینڈر کھلنے کے دوسرے روز مذکورہ ٹھیکیدار کا تمام تر واویلا اور بڈز میں تحریف کا الزام نتائج پر اثر انداز ہونے کے مترادف اور دروغ گوئی پر مبنی ہے۔ کیونکہ مذکورہ فائنانشل دستاویز کے تمام تر صفحات ایک ہی ہینڈ رائٹنگ اور ایک ہی سیاہی سے دستی بھرے گئے ہیں جنکی ضرورت پڑنے پہ الزام عائد کرنے والے ٹھیکیدار کے حربہ و خر چہ پر فرانزک تصدیق بھی کرائی جا سکتی ہے۔کنسلٹنٹ سے رپورٹ موصول ہونے پہ رزلٹ پیپرا اتھارٹیز کو بھی معائنہ کے لیے بھیجا جائے گا تا کہ میرٹ اور رولز کی بالا دستی کو یقینی بنایا جا سکے۔ ترجمان نے مزید وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ یونیورسٹی کسی بھی ٹینڈرنگ کے عمل میں کسی بھی ٹھیکیدار کے غیرقانونی حربوں سے نہ تو ماضی میں بلیک میل ہوئی ہے نہ ہی آئندہ ہو گی۔

تازہ ترین خبریں