07:17 am
مریم نواز کی بات غلط ثابت ، وفاداریاں بدلنے والوں کا عبرت ناک انجام، ن لیگ سے تحریک انصاف میں شامل ہونے والے امیدواروں کو شکست فاش

مریم نواز کی بات غلط ثابت ، وفاداریاں بدلنے والوں کا عبرت ناک انجام، ن لیگ سے تحریک انصاف میں شامل ہونے والے امیدواروں کو شکست فاش

07:17 am

گلگت (مانیٹرنگ ڈیسک)  وفاداریاں بدلنے والوں کا عبرت ناک انجام، ن لیگ سے تحریک انصاف میں شامل ہونے والے امیدواروں کو شکست۔ تفصیلات کے مطابق گلگت بلتستان انتخابات کے حوالے سے مریم نواز اور دیگر لیگی رہنماوں نے الزام عائد کیا ہے کہ لیگی رہنماوں کی وفاداریاں تبدیل کروا کر دھاندلی کی گئی۔ تاہم اس حوالے سے ایک نجی ٹی وی چینل کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ وفاداریاں تبدیل کرنے والے رہنماوں کی اکثریت کو
گلگلت بلتستان انتخابات میں عبرت ناک شکست ہوئی۔ ن لیگ کی گزشتہ حکومت کا حصہ رہنے والے 3 لیگی رہنماوں نے انتخابات سے قبل حکمراں جماعت میں شمولیت اختیار کی، تاہم گزشتہ روز ہوئے انتخابات میں تحریک انصاف کے کارکنوں نے آزاد حیثیت میں الیکشن لڑ کر تینوں سابق لیگی رہنماوں کو شکست دے دی۔ بتایا گیا ہے کہ انتخابات میں کامیاب ہونے والے 4 آزاد امیدوار دراصل تحریک انصاف کے ہی رہنما ہیں جنہوں نے ٹکٹ نہ ملنے پر آزاد
حیثیت میں الیکشن لڑ کر فتح حاصل کی اور اپنی اہمیت ظاہر کر دی۔ اس حوالے سے ایک خاتون صحافی کا دعویٰ ہے کہ تحریک انصاف نے خود الیکٹیبلز کو شکست دلوانے کی حکمت عملی بنائی۔ دوسری جماعتوں کے لوگوں کو ٹکٹ تو دیا گیا، لیکن پس پردہ آزاد حیثیت میں الیکشن لڑنے والے آزاد امیدواروں کی حمایت کر کے انہیں فتح دلوائی گئی۔ واضح رہے کہ گزشتہ روز ہوئے گلگت بلتستان کے انتخابات میں تحریک انصاف اور آزاد امیدواروں نے میدان مار لیا۔ پیپلز پارٹی 3 اور مسلم لیگ (ن)دو نشستیں حاصل کر سکی۔ گلگت بلتستان کی 24 میں سے 23 نشستوں کیلئے گزشتہ روز ووٹنگ ہوئی۔ انتخابات میں تمام 23 حلقوں کے غیر
​​​​​​​ سرکاری اور غیر حتمی نتائج سامنے آچکے ہیں۔ بڑی جماعتوں کے علاوہ ایم ڈبلیو ایم کو ایک نشست ملی جبکہ 7 آزاد امیدوار کامیاب ہوئے ہیں۔ تحریک انصاف نے اعلان کیا ہے کہ وہ گلگلت بلتستان میں حکومت بنائے گی۔