12:08 pm
گلگت بلتستان ۲۰۲۱ عبوری صوبہ یقینی تمام سٹیک ہولڈرز ایک پیج پرچین کی سپورٹ بھی حاصل ہے:صوبائی وزیراطلاعات

گلگت بلتستان ۲۰۲۱ عبوری صوبہ یقینی تمام سٹیک ہولڈرز ایک پیج پرچین کی سپورٹ بھی حاصل ہے:صوبائی وزیراطلاعات

12:08 pm

وفاقی وزیر علی امین گنڈا پور گلگت بلتستان کیلئے کچھ کرنا چاہتے ہیں حافظ حفیظ الرحمن نے دو ٹکے کا کام نہیں کیا،امجدایڈووکیٹ پہلی باراسمبلی میں آئے لیکن ابھی تک غیرسجیدہ رویہ اپنے ہوئے ہیں،صحافیوں سے گفتگو اسلام آباد(نمائندہ خصوصی)صوبائی وزیر اطلاعات نشریات و منصوبہ بندی فتح اللہ خان نے اسلام آباد میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ2021 میں گلگت بلتستان عبوری آئینی صوبہ بنے گا اس سلسلے میں تمام سٹیک ہولڈرزایک پیج پر ہیں قومی اسمبلی اور سینٹ میں دو تہائی اکثریت کے ساتھ قرارداد منظور کی جائیگی اگلے گلگت بلتستان کے اجلاس میں عبوری آئینی صوبہ کی قرار داد منظور کی جائیگی ریاست عبوری آئینی صوبہ کا فیصلہ کر چکی ہے گلگت بلتستان کو صوبے بنانے کے لیے چین کی سپورٹ حاصل ہے بھارت کاگلگت بلتستان کے حوالے سے ہمیشہ غلط پروپیگنڈا رہا ہے فتح اللہ خان نے کہا کہ گلگت بلتستان بلتستان کشمیرکا حصہ نہیں بلکہ تنازعہ کشمیر کا حصہ ہے یکم نومبر کو ہم آزاد ہوگئے کشمیر اپنی آزادی کی جنگ ابھی بھی لڑ رہے ہیں ہم آزاد لوگ ہیں۔
 ڈھائی سال سے تحریک انصاف کی حکومت گلگت بلتستان میں فنڈنگ کررہی ہے ن لیگ کاکوئی کردار نہیں سکردو شہر میں سیوریج کا وسیع نظام بنایا جائیگا دو میڈیکل کالجز ایک گلگت ایک سکردو میں بنے گا ۔شغر تھنگ اور شتونگ نالہ پراجیکٹ ،250بیڈ کا ہسپتال، ہنزل پراجیکٹ پی ایس ڈی پی کے ہیں جن پر کام جاری ہے سیاحت پر خصوصی توجہ ی جارہی ہے اس کے لیے سافٹ لون دیاجائے گا وفاقی وزیر علی امین گنڈا پور گلگت بلتستان کے لیے کچھ کرنا چاہتے ہیں حافظ حفیظ الرحمن نے دو ٹکے کا کام نہیں کیا بلکہ صرف باتوں کی حد تک عوام کو بے وقوف بنایاجاتارہا جبکہ امجد ایڈوکیٹ خود اسمبلی میں پہلی بار آئے ہیں اور اسمبلی میں آکر بھی غیر سنجیدہ نظر آتے ہیں سی پیک میں گلگت بلتستان کے لیے ایک پراجیکٹ بھی شامل نہیں تھا تحریک انصاف سی پیک میں باقاعدہ اپنا حصہ رکھے گی ۔
 

تازہ ترین خبریں