گلگت بلتستان بھر میں 13نومبر سے غیر معینہ مدت کیلئے شٹر ڈاؤن ، پہیہ جام ہڑتال کا اعلان کر دیا
  11  ‬‮نومبر‬‮  2017     |     گلگت بلتستان

گلگت ( محمد ذاکر سے ) صوبائی حکومت اور انجمن تاجران کے مابین مذاکرات ناکام ، انجمن تاجران نے گلگت بلتستان بھر میں 13نومبر سے غیر معینہ مدت کیلئے شٹر ڈاؤن ، پہیہ جام ہڑتال کا اعلان کر دیا ، سرکار خطے کے غریب عوام سے زبردستی بھتہ اور غنڈہ ٹیکس وصول کررہی ہے ، جیل جانے کیلئے تیار ہیں جب تک ٹیکس خاتمے کا تحریری نوٹیفکیشن ہاتھ میں نہیں دیا جاتا تب تک ہڑتال جاری رہے گی ، انجمن تاجران کے زیر نگرانی پریس کانفرنس میں آل پارٹیز کا مشترکہ اعلامیہ ، ہفتے کے روز گلگت پریس کلب میں انجمن تاجران کے زیر نگرانی پریس کانفرنس میں پاکستان پیپلز پارٹی ، عوامی ایکشن کمیٹی ، پاکستان تحریک انصاف ، جمعیت علماء اسلام ، مرکزی امامیہ کونسل ، جماعت اسلامی ، اسلامی تحریک ، ایم ڈبلیو ایم ، آل پاکستان مسلم لیگ ، پاکستان راہ حق پارٹی ، سپریم اپیلیٹ کورٹ بار ایسوسی ایشن ، ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن ، ہوٹلز ایسوسی ایشن ، جیمز اینڈ منرلز ایسوسی ایشن ، کنٹریکٹرز ایسوسی ایشن جی بی سمیت تمام سیاسی و مذہبی اور کاروباری حلقوں نے مشترکہ کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ انجمن تاجران نے جب ظالمانہ ٹیکس کے خلاف آواز اٹھائی تو صوبائی حکومت کی مذاکراتی ٹیم نے دھوکہ اور فراڑ کی طرف سے ہڑتال ختم کرنے کا مطالبہ کیا اور صوبائی مذاکراتی تیم نے وزیر اعلیٰ کا حوالہ دیکر صحافی برادری کی موجودگی میں اس بات کا یقین دلایا کہ مرکزی انجمن تاجران کے مطالبات ہم ماننے کیلئے تیار ہیں اور ٹیکس کا ایشو عوام کا نہیں عوام کا مسئلہ ہے ۔ اسلئے ل سے کوئی بھی بینک ٹیکس کی مد میں کٹوتی نہیں کریگا اور یقین دلایا گیا کہ پچیس نومبر تک ٹیکس معطلی کا نوٹیفکیشن بھی جاری کیا جائے ۔ تاحال کوی نوٹیفکیشن جاری نہیں ہوا ہے اسلئے انجمن تاجران سمیت آل پارٹیز نے فیصلہ کیا ہے کہ جب تک ٹیکس معطلی کا تحریری نوٹیفکیشن ہاتھ میں نہیں دیا جاتا

تب تک 13نومبر سے گلگت بلتستان بھر میں تمام کاروباری مراکز ، مارکیٹیں ، دکانیں ، ہوٹلز ، غیر معینہ مدت تک بند کئے جاینگے ۔ انہوں نے مشترکہ پریس کانفرنس میں کہا کہ گلگت بلتستان میں غیر قانونی ٹیکس غریب عوام پر ظلم و زیادتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت نے گلگت بلتستان سے غیر قانونی ٹیکس ختم کرنے کے بجائے اب مزید چودہ قسم کے ٹیکسز بھی لگائے جانے کی راہ ہموار کی جا رہی ہے جس میں ذرعی آمدنی اور ذرعی زمین کی قیمت پر ٹیکس ، افراد پر لگائے جانیوالے ٹ ؁کس ، تفریح اور لطف اندوز سرگرمیوں پر ٹ ؁کس ، زمینوں اور عمارتوں پر ٹیکس ، اشتہاروں پر ٹیکس ، زمینی اور بحری راستوں سے سامان کی ترسیل اور مسافروں کی آمدورفت پر ٹیکس ، گاڑیوں ، کشتیوں ، لانچوں اور جہازوں پر ٹیکس ، جانوروں پر ٹیکس پیشہ تجارت اور روزگار پر ٹیکس ، مقامی علاقے میں استعمال یا فروخت کیلئے آنے اور جانے والے مال پر ٹیکس ، جب تک وفاقی و صوبائی حکومت تحریری طور پر ان تمام ٹیکسز کو معطل ککے تحریری نوٹیفکیشن ہمارے ہاتھ میں نہیں دیتے تب تک 13نومبر سے گلگت بلتستان بھر میں غیر معینہ مدت کیلئے شٹر ڈاؤن اور پہیہ جام ہڑتال کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

گلگت بلتستان

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved