کسی بھی تعلیمی ادارے کیساتھ زیادتی نہیں ہونے دینگے، ڈپٹی ڈائریکٹر ایجوکیشن
  7  دسمبر‬‮  2017     |     گلگت بلتستان

استور(بیورورپورٹ) ڈپٹی ڈائریکٹر محکمہ ایجوکیشن محمد ابراہیم کی زیر سرپرستی پیرنٹس ٹیچر اسسمنٹ کا انعقاد فیڈرل گورنمنٹ بوائز ہائی سکول منعقد ہوا۔جس میں ڈی آئی ایس گلاب الدین اے ای اوز کے علاوہ ضلع بھر کے سکولز ہیڈ ماسٹرز اور سکول منیجمنٹ چیرمینز نے شرکت کی۔ اس موقع پر ڈپٹی ڈائرکٹر ایجوکیشن محمد ابراہیم نے کہا کہ اچھے انسان بننے کیلئے دن رات کی کاوششوں کی ضرورت ہے۔ایک اچھا انسان ایک اچھے معاشرے کے قیام میں اپنا کردار ادا کرسکتا ہے۔ اچھے معاشرے کی تعمیر وترقی میں اساتذہ کا بنیادی کردار دار ہوتا ہے لہذا ہمیں اچھے مہذب انسان اور آئیڈیل معاشرے کی تعمیر میں کوشاں رہنے کی ضرورت ہے۔ وہی قومیں ترقی کرتے ہیں جو کنٹیجنٹ اور کنٹریکٹ کی ملازمتوں کو نہ ڈھونڈے اور سیاسی اثر ورسوخ نہ ہو۔ میں اس موقع پر سیاسی اقابرین سے بھی درخواست کرتا ہوں کہ وہ ہمیں اپنا کام کرنے دے ہم اپناکام بہتر طریقے سے کرنا جانتے ہیں اور یقین دلاتے ہیں

کہ کسی بھی تعلیمی ادارے کیساتھ زیادتی نہیں ہونے دینگے۔اس موقع پر ڈی آئی ایس گلاب الدین نے کہا کہ تمام سکولز جن میں ایس ایم سی نہیں ہے فی الفورسکول منیجمنٹ چیرمین کا انتخاب کریں اور بجٹ کوان سے مشورہ لئے بغیر استعمال نہ کریں۔ایس ایم سی کا کام سکول کی فلاح وبہبود اور سکول انتظامیہ اور دیگر اداروں کیساتھ تعاون کر کے ان کی بہتری کے لئے اپنا کردار ادا کرنا ہے۔اس کے علاوہ مختلف سکولز ہیڈماسٹرز نے کہا سکول مبیجمنٹ کمیٹی کا سکول کی بہتری میں بنیادی کردار ہوتا ہے انکے تعاون سے ہی ایک اچھا سکول اور اس میں بہترین تعلیمی نظام قائم کرسکتے ہیں۔ اس موقع پر سکول منیجمنٹ چیرمینز نے سکول انتظامیہ کی کاوشوں کو سراہا اور ان کیساتھ مکمل تعاون کا یقین دلاتے ہوئے مشورہ دیا کہ سال بھرمیں کم ازکم ایک بار پیرنٹ ٹیچر میٹنگ رکھا جائے تاکہ سکول کے مسائل سے آگاہی ہوگی اور ان کو دور کرنے کے لئے ملکر کوشش کرینگے


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

گلگت بلتستان

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved