تازہ ترین  
پیر‬‮   21   جنوری‬‮   2019

6ماہ سے تنخواہوں کی عدم ادائیگی،ریسکیوملازمین کااحتجاجی تحریک کاآغاز(وزیراعلیٰ کافوری ادائیگی کاحکم)


چلاس(مجیب الرحمان)6 ماہ سے تنخواہیں نہ ملنے کے خلاف ریسکیو 1122اہلکاروں نے احتجاجی تحریک کا آغاز کر دیا۔اور ریسکیو آفس سے شاہراہ قراقرم تک احتجاجی ریلی نکالی اور باب چلاس پر دھرنادے دیا۔احتجاجی مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈز بھی اٹھا رکھے تھے جن پر مطالبات کے حق میں نعرے بھی درج تھے۔مظاہرین نے مطالبات کے حق میں شدید نعرے بازی بھی کی۔مظاہرین کا کہنا ہے کہ انہیں چھے ماہ سے تنخواہیں ادا نہیں کی گئی ہیں۔گھروں میں فاقوں کی نوبت آچکی ہے اور بچوں کی سکول فیس ادا نہ ہونے سے تعلیم متاثر ہو رہی ہے۔ریسکیو اہلکاروں کا کہنا ہے کہ انہیں ہیٹنگ الاؤنس،ایف ڈی اے الاؤنس سے بھی محروم رکھا گیا ہے. تاحال انہیں مستقل بھی نہیں کیا گیا ہے۔احتجاجی مظاہرین کا کہنا ہے کہ ان کے مطالبات پر فوری عملدرآمد نہیں ہوا تو وہ کمشنر آفس کے سامنے احتجاجی دھرنا اور شاہراہ قراقرم کو مکمل طور پر بند کر دیں گے۔
ہنزہ(عبدالمجید) ضلع ہنز ہ و نگر کے ملازمین نے ضلع ہ پریس کلب چوک پر احتجاج کیا گیا ملازمین نے گاڑیاں بھی چوک پر لا کر کھڑی کردیں تھیں۔ ملازمین کو گزشتہ نصف برس سے ماہانہ تنخواہیں ادا نہ کرنے پر سراپا احتجاج کر رہے تھے۔ ساتھ ہی موسم سرما کی ہیٹنگ الاونس کے ساتھ ساتھ دیگر تمام تر مراعات محکمہ نے تاحال ادا نہیں کیا ہے۔ اور ان کا چولھا جلنا روز بروز دشوار سے دشوار تر ہوتا جا رہا ہے۔ احتجاجی دھرنے کے شرکا کا کہنا ہے کہ دن ہو یا رات، صبح ہو یا شام، اجالا ہو یا اندھیرا ہم ہر وقت عوام الناس کے تمام تر دکھ و سکھ میں برابر کے شریک ہوتے ہیں۔ اور عوام کے تمام تر مشکلات میں پہلا یار و مددگار ہم ہی ہیں جب کہ ہم اپنے اولاد اور گھر کے بزرگوں کی کس طرح دیکھ بال کرینگے؟۔ ہمارا مطالبہ یہ ہے کہ ہر ماہ کی پہلی ہفتے کو ماہپانہ اجرت ادا کیا جائے ۔موسم سرما کی اور دیگر مرعات و الانس کی ادائیگی کو یقینی بنایا جائے۔ جیسا کہ دیگر محکموں میں ہوتا ہے ۔تمام تر ملازمین کو مستقل کروانے لے لئے کیپٹن (ر) خرم آغا چیف سکریٹری ، وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان اپنا کلیدی کردار ادا کرے ۔
گلگت ( اوصاف نیوز ) وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے ریسکیو1122ملازمین کو تنخواہوں کی عدم ادائیگیوں کا نوٹس لیتے ہوئے متعلقہ آفیسران کو ایک ہفتے میں تمام ریسکیو ملازمین کے تنخواہوں کی ادائیگی کا حکم دیا ہے۔ وزیر اعلیٰ سیکریٹریٹ سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے ریسکیو1122کے ملازمین کی مدت ملازمت کے توسیع کے سمری کی منظوری دی ہے۔ ملازمین کی تنخواہوں کی مد میں 5کروڑ12لاکھ روپے کی رقم کی بھی منظوری دے چکے ہیں جبکہ ڈی جی ریسکیو1122کی مدت ملازمت میں توسیع کے سمری کی منظوری بھی وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان کے بعد گورنر گلگت بلتستان سے لی گئی ہے۔وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے ریسکیو1122ملازمین کو 6ماہ سے تنخواہوں کی عدم ادائیگی کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے متعلقہ آفیسران کو ایک ہفتے میں تمام ملازمین کے تنخواہوں کی ادائیگی کا حکم دیا ہے۔




 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں


آج کا مکمل اخبار پڑھیں

تازہ ترین خبریں




     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved