04:14 pm
دنیا کا نایاب ترین چیتا 100 سال بعد پھرنظر آگیا

دنیا کا نایاب ترین چیتا 100 سال بعد پھرنظر آگیا

04:14 pm

نیروبی(ویب ڈیسک) 100سال قبل افریقہ میں دنیا کا نایاب ترین سیاہ رنگ کا جیتا دیکھا گیا تھا اور اب اتنے عرصے بعد ایک بار پھر وہ کینیا میں دوبارہ نظر آ گیا ہے۔ نیشنل جیوگرافک ڈاٹ کام کے مطابق کینیا کے بائیولوجسٹ نک پیلفولڈ اور ان کی ٹیم نے لوئیسابا کنزروینسی کی جھاڑیوں میں کیمرے نصب کیے جن میں اس سیاہ رنگ کے مادہ چیتے کو دوبارہ زندہ دیکھا گیا ہے۔
ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ چیتا میلینزم (Melanism)نامی عارضے کا شکار ہے جس کی وجہ سے اس کی رنگت سیاہ ہو چکی ہے۔نک پیلفولڈ اور ان کی ٹیم کے نصب کردہ کیمروں سے حاصل ہونے والی ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ یہ کالے رنگ کا مادہ چیتا عام رنگ کے چیتوں کے ایک جھنڈ کے ساتھ جھاڑیوں میں گھوم رہا تھا۔ یہ سیاہ رنگ کا مادہ چیتا نوعمر تھا جس کا مطلب ہے کہ یہ وہ چیتا نہیں ہے جو 100سال پہلے دیکھا گیا بلکہ یہ ایک دوسرا چیتا ہے جو اسی عارضے کا شکار ہو کر سیاہ رنگت کا ہو گیا ہے۔ جھنڈ میں ایک بوڑھا مادہ چیتا بھی تھا جس کے متعلق نک پیلفولڈ کا کہنا ہے کہ ”ممکنہ طور پر وہ اس سیاہ چیتے کی ماں ہو سکتی ہے۔“ماہرین کے مطابق جس طرح البانزم میں جانوروں یا انسانوں کی رنگت سفید ہو جاتی ہے اس کے برعکس میلینزم ایسا عارضہ ہے جس سے رنگت مکمل سیاہ ہو جاتی ہے۔ یہ عارضہ جینز میں تبدیلی کی صورت میں جانوروں کو لاحق ہوتا ہے تاہم اس طرح کا واقعہ انتہائی نایاب ہوتا ہے۔

تازہ ترین خبریں