11:07 am
ٹیکس ایمنسٹی سکیم کیا ہے؟

ٹیکس ایمنسٹی سکیم کیا ہے؟

11:07 am

اسلام آباد(نیو زڈیسک)ٹیکس ایمنسٹی سکیم کوئی انوکھی چیزنہیں،ٹیکس عدم استحکام ٹیکس دہندگان کے ایک مخصوص گروپ کے لئے محدود وقت کا موقع ہے جو ٹیکس کی ذمہ داری (دلچسپی اور جزا سمیت) گزشتہ ٹیکس کی مدت یا دور اور مجرمانہ پراسیکیوشن کے خوف کے بغیر، معافی کے بدلے میں مقرر کردہ رقم ادا کرنے کے لئے ہے۔مختلف ممالک میں ایسی سکیمیں رائج ہیں،ٹیکس ایمنسٹی سکیم کے تحت زیادہ تر ملکوں میں ٹیکس کی شرح یا اس سے
بھی زیادہ ٹیکس کی وصولی کی جاتی ہے البتہ پاکستان میں جن پر کشش شرائط پر اس سکیم کو متعارف کیا گیا ہے اس کی کہیں مثال نہیں ملتی۔حالیہ چند برسوں میں امریکہ، آسٹریلیا، کینڈا، جرمنی سمیت متعدد ممالک نے ٹیکس چوروں اور بیرون ملک اثاثےظاہر کرنے کے سلسلہ میں مختلف ایمنسٹی سکیموں کا اعلان کیا لیکن کسی بھی ملک میں اثاثے ظاہر کرنے والوں سے رعایتی شرح سے ٹیکس وصول نہیں کیا گیا۔پاکستان کے موجودہ وزیرخزانہ اسد عمر کے مطابق ٹیکس ایمنسٹی سکیم کا مقصد کالا دھن سفید کرنا ہے۔ثاثہ جات پر ایمنسٹی اسکیم سے صرف کاروباری افراد فائدہ اٹھا سکیں گے اور یہ کہ عالمی مالیاتی ادارے (آئی ایم ایف) کو اسکیم پر اعتراض نہیں ہے وزارت خزانہ کے ایک عہدیدار نے اپنا نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ اس اسکیم سے منی لانڈرنگ کے الزامات کا سامنا کرنے والے سیاست دان فائدہ نہیں اٹھا سکیں گے۔تاہم بے نامی بینک اکاؤنٹس رکھنے والے افراد اس اسکیم کے ذریعے اپنے اثاثے ظاہر کر سکیں گے اور انہیں اپنے ذرائع آمدن نہ بتانے کی چھوٹ حاصل ہو گی۔واضح رہے کہ تحریک انصاف ماضی کی حکومتوں کی جانب سے متعارف کروائی گئی ایسی سکیموں کی مخالفت کرتی رہی ہے۔خیال رہے کہ حال ہی میں حکومت نے بےنامی بینک اکاؤنٹس رکھنے والوں کے خلاف کاروائی کے لئے قانون سازی کے بعد قواعد و ضوابط کی منظوری دی ہے۔مسلم لیگ ن کے رہنماء اور سابق وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کا کہنا ہے کہ حکومت کا اس وقت ٹیکس اسکیم لانے کا مقصد ٹیکس آمدن میں کمی کو پورا کرنا ہےپاکستان میں حکومتیں ماضی میں بھی ٹیکس ایمنسٹی اسکیم جاری کرتی رہی ہیں اور پچھلی حکومت کے دور میں تین ٹیکس ایمنسٹی اسکیم جاری کی گئیں تھیں، جس میں بے نامی جائیدادوں کو قانونی قرار دینے کی (جون 2018 کو ختم ہونے والی) ٹیکس ایمنسٹی اسکیم سے حکومت کو 120 ارب روپے کی آمدن ہوئی تھی۔

تازہ ترین خبریں