11:41 am
تھائی ریسٹورنٹ جو گزشتہ 45 سالوں سے ایک ہی یخنی فروخت کررہا ہے

تھائی ریسٹورنٹ جو گزشتہ 45 سالوں سے ایک ہی یخنی فروخت کررہا ہے

11:41 am

واٹانا پانیچ، بنکاک کے اکامائی مضافاتی علاقے کا ایک ریسٹورنٹ ہے۔ ہر روز سینکڑوں  افراد اس ریسٹورنٹ میں کھانا کھانے اور سوپ پینے آتے ہیں۔ اس ریسٹورنٹ کی سب سے خاص ڈش بیف نوڈل سوپ ہے۔ اس سوپ کو بنانے کے لیے تمام اجزا  تو ہر روز تیار کیے جاتے ہیں، لیکن ایک چیز ایسی ہے جو گزشتہ 45 سالوں  سے ویسے ہی استعمال کی جا  رہی ہے۔اس ریسٹورنٹ کے بیف نوڈل سوپ کے لیے جو یخنی تیار کی جاتی ہے وہ اصل میں 45 سال پہلے تیار کی گئی تھی۔اس ریسٹورنٹ کے مالک ہر رات بچی ہوئی یخنی پھینکنے کی بجائے اسے احتیاط سے محفوظ کرتے ہیں اور اسے اگلے دن بنائی گئی یخنی کے ساتھ  ہی استعمال کرتے ہیں۔یہ ریسٹورنٹ گزشتہ 45 سالوں سے ایسا ہی کر رہا ہے۔ ریسٹورنٹ  پرانی یخنی کے استعمال کو ہی   اپنی ذائقے دار ڈش  کا راز قرار دیتا ہے۔
 
یہ ریسٹورنٹ کھانا پکانے کے لیے جو طریقہ استعمال کرتا ہے ، اس میں بچا ہوا کھانا پھینکا نہیں جاتا بلکہ اسی میں مزید اجزا شامل کر کے دوبارہ پکایا جاتا ہے۔اس طرح یخنی اجزا سے زیادہ سے زیادہ ذائقہ جذب کرتی ہے۔ کھانا پکانے کا سادہ اصول ہے کہ جتنا آپ یخنی کو پکائیں گے، اتنا ہی بہتر ذائقہ ہوگا تاہم یہ تھائی ریسٹورنٹ یخنی پکانے کے فن کو اپنے عروج پر لے گیا ہے اور گزشتہ 45 سالوں سے ہر روز پچھلے دن کی یخنی پکا رہا ہے۔ بی کے میگزین کے مطابق اس ریسٹورنٹ کے باورچی ہر رات بچی ہوئی یخنی کو ٹھنڈا کر کے فریج میں رکھتے ہیں، تاکہ یہ خراب نہ ہوجائے۔اس کے بعد اگلے دن اسے مزید یخنی پکانے کےلیے بنیاد کے طور پر استعمال کیا جاتا ہے۔اگلے روز باورچی اس یخنی میں 25 کلو گوشت شامل کرتے ہیں اور پھر مزید اجزا شامل کر کے یخنی کو زیادہ کر لیتےہیں۔ ناٹاپونگ کاوینونٹاونگ اپنے خاندان کی تیسری نسل سے ہیں جو اس ریسٹورنٹ کو چلا رہے ہیں۔ اُن کا کہنا ہے کہ اُن کی اگلی نسل بھی اس ریسٹورنٹ کو سنبھالے گی لیکن تب بھی ایک چیز نہیں بدلے گی اور وہ ہے یخنی۔

تازہ ترین خبریں