11:05 am
’’بیک ٹو دی فیوچر ‘‘ فلائٹ یکم جنوری کو اڑی اور 31دسمبر کو لینڈ کر گئی ۔۔۔ حیران کن واقعہ

’’بیک ٹو دی فیوچر ‘‘ فلائٹ یکم جنوری کو اڑی اور 31دسمبر کو لینڈ کر گئی ۔۔۔ حیران کن واقعہ

11:05 am

واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک) ٹائم مشین کی باتیں آج سے 100سال پہلے کے لوگوں کیلئے ضرور ناقابل فہم ہونگی مگر آج کے اس ترقی یافتہ دور میں جب انسان ٹیکنالوجی کی دنیامیں اس قدر ترقی پا چکا ہے تو اس قسم کی کوئی بھی بات ناقابل یقین نہیں لگتی ۔ ’’بیک ٹو دی فیوچر ‘‘ کی باتیں جن کے مطابق انسان اپنے آج سے اپنےگزشتہ کل میں داخل ہو سکتا ہے سننے میں کانوں کو بڑا عجیب لگتا ہے مگر اس کی خوبصورت مثال نئے سال کے موقع پر اس وقت رقم ہوئی جب یکم جنوری کو شنگھائی سے اڑنے والی پرواز اکتیس
 
دسمبر کو سانفرانسسکو میں اتری۔خبر رساں ادارے کے مطابق شنگھائی اور سان فرانسسکو میں ٹائم زون کا فرق ہے۔ امریکی ادارے کی یونائیٹڈائیرلائن نے شنگھائی سے اتوار کی رات بارہ بج کربیس منٹ پر اڑان بھری۔یہ پروازمسلسل نو گھنٹے اڑانے کے بعدجب سان فرانسسکو پہنچی تو وہاں اکتیس دسمبر کی شام کے چھ بج کرچوون منٹ ہورہے تھے۔یونائیٹڈ ائیرلائن کی پروازیو اے890 نے نو گھنٹے چالیس منٹ کے سفرکی دوران نوہزار کلومیٹر کا سفرطے کیا ۔ مسافروں نے اس واقعے کو انتہائی دلچسپ قراردیتے ہوئے سوشل میڈیا پر اسے خوب شیئر بھی کیا ۔