سندھ اور مکران چاند پر پہنچ گئے
  20  اکتوبر‬‮  2017     |     دلچسپ و عجیب

ویسے تو پاکستان میں مشہور جگہوں کی کوئی کمی نہیں لیکن صوبہ بلوچستان میں مکران اور صوبہ سندھ کو یہ منفرد اعزاز حاصل ہے کہ سیارہ زحل کے چاند ’’اینسیلاڈس‘‘ (Enceladus) کی سطح پر موجود دو مقامات کو ’’مکران‘‘ اور ’’سندھ‘‘ کے نام دیئے گئے ہیں۔سیارہ زحل اپنے خوبصورت حلقوں کے باعث ہمارے نظامِ شمسی میں ممتاز مقام رکھتا ہے جبکہ سیارچوں (چاندوں) کی تعداد کے حوالے سے بھی یہ نظامِ شمسی میں دوسرے نمبر پر ہے۔ اس کا چھٹا سب سے بڑا چاند اینسیلاڈس ہے جسے ولیم ہرشل نے 1789 میں دریافت کیا تھا۔ اینسیلاڈس کا قطر 500 کلومیٹر ہے اور اس کی سطح پتھریلی ہے جس پر گڑھوں اور لکیروں جیسے دکھائی دینے والے ہزاروں خد و خال ہیں جو اس کے حسن کو دوبالا کرتے ہیں۔یہ گڑھے اور

لکیریں دراصل اینسیلاڈس پر موجود گھاٹیوں اور ٹیلوں پر مشتمل ہیں۔ ان میں سے ہر سلسلے کو اپنی جداگانہ ساخت کے باعث زمینی شہروں یا مشہور مقامات کے ناموں پر مختلف نام دیئے گئے ہیں۔ ایسے ہی دو نام ’’سندھ سلسی‘‘ (Sind Sulci) اور ’’مکران سلسی‘‘ (Makran Sulci) ہیں جو ظاہر کرتے ہیں کہ یہ خاصے بڑے علاقے ہیں جن میں سے ہر ایک میں کئی گھاٹیاں اور ٹیلے شامل ہیں۔فلکیات کی دنیا میں سندھ اور مکران کو یہ اعزاز 2010 میں ماہرینِ فلکیات کی عالمی انجمن (آئی اے یو) کی جانب سے دیا گیا جو پاکستان میں ان مقامات کی اہمیت اور قدر و منزلت کا عالمی اعتراف بھی ہے۔واضح رہے کہ اینسیلاڈس کی سطح کا تفصیلی مشاہدہ خلائی جہاز ’’کیسینی‘‘ کے اس سے قریب گزرنے پر 2005 ہی میں ہوسکا جس سے پتا چلا کہ اس منفرد سیارچے کی سطح سے فوارے (گیزر) ابلتے رہتے ہیں جن میں نمک کی قلموں کے علاوہ پانی، برف کے ذرات اور ہائیڈروجن گیس وغیرہ تک شامل ہوتے ہیں۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

دلچسپ و عجیب

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved