’اللہ کے وجود کے بارے میں میرے ذہن میں شکوک و شبہات تھے لیکن پھر مکہ گئی اور وہاں جیسے ہی کعبہ پر پہلی نظر پڑی تو۔۔۔‘ مسلمان خاتون نے ایسی بات
  11  جنوری‬‮  2018     |     دلچسپ و عجیب

دنیا میں ایسے لوگوں کی کمی نہیں جن کے ذہن میں خدا کے وجود کے حوالے سے سوالات پائے جاتے ہیں۔ ہزار عقلی دلائل بھی ایسے لوگوں کو قائل نہیں کر پاتے لیکن بعض اوقات صرف ایک روحانی تجربہ ایسا ہوتا ہے کہ دل سے سارے شکوک و شبہات پلک جھپکتے میں غائب ہو جاتے ہیں۔گزشتہ روز ایک پاکستانی لڑکی نے سوشل میڈیا ویب سائٹ parhlo پر کچھ ایسی ہی ایمان افروز کہانی بیان کی ہے۔آئزہ ارشاد نامی یہ لڑکی لکھتی ہیں ”کعبے کا طواف کرنے والے ہزاروں کے ہجوم کا حصہ بننے سے پہلے میں متذبذب تھی۔ میں نے خود سے پوچھا کہ مجھ جیسی گناہگار کو اس نے یہاں کیونکر بلا لیا؟’ میں نے اپنے سامنے سنہری خطاطی پر ایک نظر ڈالی، میں نے دیکھا کہ ہر کسی کی آنکھوں میں آنسو تھے، ہر کوئی شکر بجا لارہا تھا اور اپنے گناہوں پر استغفار کررہا تھا۔

یہاں کسی کے بھی لہجے میں سختی نہیں تھی، کسی میں بھی خود غرضی نظر نہیں آتی تھی۔ غلطی سے بھی کوئی کسی سے چھوجاتا تو فوری معذرت کرتا۔ اگرچہ میں ان بہت سے لوگوں کی زبان نہیں سمجھتی تھی لیکن پھر بھی مجھے ان کا ہر لفظ سمجھ آرہا تھا۔ وہ سب بھی وہی مانگ رہے تھے جو میں مانگ رہی تھی۔ میں نے اپنے کانپتے ہوئے ہاتھ کعبہ پر رکھے، میرے اردگرد بہت سے مرد اور خواتین سسکیاں بھررہے تھے، ہم میں سے ہر کوئی مختلف زبان میں دعا کررہا تھا لیکن ہم سب ایک جیسے تھے۔ میں نے خدا کو کبھی دیکھا نہیں اور اس کے وجود کے بارے میں میرے ذہن میں ہمیشہ سوالات رہے تھے، لیکن جب میں نے کعبہ کو چھوا تو اسے محسوس کر لیا۔ اس لمحے میرے ذہن میں موجود تمام سوالات ختم ہوگئے کیونکہ مجھے اس کا وجود یوں محسوس ہوا کہ انکار ممکن ہی نہیں تھا۔“


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
100%
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں

  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

دلچسپ و عجیب

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved