سرجری سیکھنے کیلئے مصنوعی لاش تیار
  13  جون‬‮  2018     |     دلچسپ و عجیب

اسلام آباد(نیو ز ڈیسک)اسے بنانے کی ضرورت یوں پیش آئی کہ پوری دنیا میں جراحی کیلئے لاشوں کے عطیات کی شدید کمی ہے اور یوں نئے ڈاکٹر سرجری اور تجربات سے عاری ہیں، بعض میڈیکل کالجوں میں ایک بھی لاش موجود نہیں

اوردنیا کے بعض ممالک ایسے بھی ہیں جہاں لاشوں کی بے حرمتی کی وجہ سے ان کی چیرپھاڑکی اجازت نہیں دی جاتی۔اس نظام کو یونیورسٹی آف ماؤنٹ پیلیئر کے ڈاکٹر گیلام کیپٹیئر اور ان کے ساتھیوں نے تیار کیا ہے۔ پہلے مرحلے میں انہوں نے گردن اور پیڑو (پیلوس) کے مقامات پر سرجری کی سہولت فراہم کی ہے، اس کی تیاری میں ڈاکٹر گیلام اور ان کے معاونین نے اصل لاش کی جراحی کی اور اس کی پرت در پرت اتار کر اسے جدید سکینر سے کمپیوٹر میں محفوظ کیا ہے، تاہم یہ ڈاکٹروں اور طالبعلموں کو 100 فیصد درست معلومات فراہم کرتی ہے۔ اگلے مرحلے میں پورے جسم کے حصوں کا تھری ڈی ڈیٹا بیس بنایا جائیگا اور کسی آپریشن سے قبل بھی اس پر پریکٹس کی جاسکے گی


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

دلچسپ و عجیب

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved