01:31 pm
جب طیارہ گراتوکیاہواعینی شاہدین کے دل دہلادینے والے انکشافات

جب طیارہ گراتوکیاہواعینی شاہدین کے دل دہلادینے والے انکشافات

01:31 pm

نیروبی (نیوز ڈیسک) ایتھوپیا کے تباہ ہونے والے طیارے بوئنگ 737 میکس 8 میں جہاز کے عملے سمیت149 افراد سوار تھے جن میں سے کسی کے بھی بچنے کی امید نہیں کی جارہی ہے ۔ برطانوی نشریاتی ادارے (بی بی سی ) کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ایتھوپیا ایئر لائن کے طیارے نے ’ ایڈس ابابا ‘ نامی ایئر پورٹ سے کینیا کیلئے پرواز بھری لیکن کچھ دورجا کر چھ منٹ کے بعد اس کا رابطہ منقطع ہو گیا اور جہاز حادثے کا شکار ہو گیا ۔ جس کے نتیجے میں جہاز میں موجود تمام افراد ہلاک ہو گئے ہیں ، جہاز میں 33 ممالک کی شہریت رکھنے والے 149 افراد سوار تھے جبکہ 7 رکنی عملہ بھی جہاز میں سوار تھا ۔ جہاز آج صبح تقریب 8 بج کر 44منٹ پر حادثے کا شکار ہوا ۔ ایئر لائن کی جانب سے تاحال معلومات فراہم نہیں
کہ کن وجوہات کی بنیاد پر طیارہ گر کر تباہ ہو ا ۔ دو سری جانب ڈیلی میل آن لائن کا کہناہے کہ تباہ ہونے والا طیارہ ایئر لائن کی جانب سے چند ماہ قبل ہی خریدا گیا تھا ۔ بی بی سی کے مطابق ایک عینی شاہد نے بتایا کہ جیسے ہی طیارہ زمین پر گرا تو ایک زور دار دھماکہ ہوا اور آگ لگ گئی ، طیارہ تباہ ہونے کی خبر وزیراعظم ‘ ابی احمد ‘ کی جانب سے دی گئی اور انہوں نے متاثرہ خاندان کے افراد کے ساتھ اظہار افسوس بھی کیا ۔ واضح رہے کہ ایتھوپیا کا مسافر طیارہ بوئنگ 737 میکس گر کر تباہ ہو گیا ہے جس میں 149 مسافر سوار تھے اور بڑی تعداد میں ہلاکتوں کے خدشے کا اظہار کیا جارہا ہے ۔ غیر ملکی میڈیا کے مطابق ایتھوپیا کی ایئر لائن کا بوئنگ طیارہ آج کینیا کے دارلحکومت نیروبی جار ہا تھا کہ پرواز بھرنے کے چند منٹ کے بعد ہی راستے میں حادثے کا شکار ہو گیا اور گر کر تباہ ہو گیا جس میں 149 مسافر سوار تھے اور 8 رکنی جہاز کا عملہ بھی موجود تھا ۔ یہ واقع آج صبح پونے نو بجے پیش آیا تاہم ابھی تک طیارہ حادثے کے حوالے سے مزید تفصیلات فراہم نہیں کی گئی ہیں اور نہ ہی یہ بتایا گیا ہے کہ کتنے افراد جاں بحق ہوئے ہیں ۔مقامی انتظامیہ کا کہناہے کہ ریسکیو آپریشن شروع کر دیا گیا ہے ۔ ڈیلی میل کا اپنی رپورٹ میں کہنا ہے کہ گر کر تباہ ہونے والا طیار چند مہینے قبل ہی ایئر لائن نے حاصل کیا تھا اور یہ بالکل نیا ایڈیشن تھا ۔

تازہ ترین خبریں