12:54 pm
سرف ایکسل کے اشتہار میں مسلمان اور ہندو لڑکی کی دوستی دکھانے پر بھارتی اتنے سیخ پا ہو گئے

سرف ایکسل کے اشتہار میں مسلمان اور ہندو لڑکی کی دوستی دکھانے پر بھارتی اتنے سیخ پا ہو گئے

12:54 pm

نئی دہلی (ویب ڈیسک) بھارت میں سرف ایکسل کے ایک نئے اشتہار کے باعث انتہاءپسند بھارتیوں نے خوب اودھم مچا رکھا ہے جس میں ایک بچی اپنے مسلمان دوست بچے کو ہولی کے موقع پر عبادت کیلئے مسجد اتارتی ہے۔سوشل میڈیا پر اس اشتہار کو ہندو مخالفت قرار دیتے ہوئے خوب غم و غصے کا اظہار کیا جا رہا ہے اور فیس بک و ٹوئٹر کے علاوہ انتہاءپسند بھارتیوں نے اپنا احتجاج ریکارڈ کروانے کیلئے پلے سٹور پر موجود ’ایکسل‘ ایپلی کیشن پر بھی منفی پیغامات اور ریٹنگ کی بھرمار کر دی،
مگر سرف ایکسل کی ایپلی کیشن پر نہیں بلکہ مائیکرو سافٹ کی مشہور زمانہ ایپلی کیشن ’ایکسل‘ پر۔اگرچہ ابھی تک اس ایپلی کیشن پر آنے والے منفی ریویوز کی تعداد کم ہے مگر ابھی تو معاملہ شروع ہوا ہے اور جس تیزی کیساتھ سوشل میڈیا پر اس اشتہار کیخلاف مہم کے نتیجے میں ’ایکسل‘ ایپلی کیشن کیلئے منفی ریویوز دئیے جا رہے ہیں، آنے والے چند گھنٹوں ان کی تعداد میں بہت زیادہ اضافہ ہو جائے گا۔ایک صارف نے اپنے ریویو میں لکھا ”سرف ایکسل کا بائیکاٹ کرو کیونکہ یہ ہندوؤں کے خلاف ہے۔ پاکستان میں جا کر کاروبار کر“رمیش نے اس سارے معاملے کو غلط سمجھ کر ریویو کرنے والے بھارتیوں پر طنز کرتے ہوئے لکھا ”ہندو بھائیو اکٹھے ہو جاؤ اور انہیں اپنی بیوقوفی کی اصل طاقت دکھاؤ، اس دنیا کو دکھا دو کہ بیوقوفی میں تمہارا دوسرا نہیںبلکہ پہلا نمبر ہے۔“ایک شخص نے اپنے ریویو میں لکھا کہ ”میں ’سرف‘ کیساتھ اشتراک سے پہلے ’ایکسل‘ ایپلی کیشن کو بہت پسند کرتا تھا لیکن اس نے اب بہت ہی برا ہندو مخالفت اشتہار بنایا ہے۔ اب میں جہاں بھی ایکسل کا لفظ پڑھتا ہوں تو میرے ذہن میں صرف اور صرف ہندو مخالفت مہم آ جاتی ہے۔۔۔ تمہیں ایسا کرتے ہوئے شرم آنی چاہئے۔“یقینا سرف ایکسل اور مائیکرو سافٹ ایکسل کا آپس میں کوئی تعلق نہیں ہے جبکہ سرف کے اشتہار میں بھی مذہبی آہنگی کو پھیلانے کی کوشش کی گئی ہے مگر انتہاءپسند بھارتی اسے سمجھنے سے بالاتر ہیں اور بے تکی مہم چلا رہے ہیں۔

تازہ ترین خبریں