02:27 pm
مسئلہ کشمیر پر کسی بھی تیسرے ملک کی ثالثی قبول نہیں، بھارت

مسئلہ کشمیر پر کسی بھی تیسرے ملک کی ثالثی قبول نہیں، بھارت

02:27 pm

واشنگٹن ، نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستانی وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات کے دوران مسئلہ کشمیر کے حل کےلئے ثالثی کی پیشکش اور بھارتی وزیر اعظم نریندرمودی کے مسئلہ کشمیر کے حل کےلئے ثالثی کی درخواست کے حوالے سے امریکی صدر کے بیان پر بھارت تلملا اٹھا ہے ۔ بھارت نے نہ صرف ٹرمپ کی مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی پیشکش کو ٹھکرا دیا ہے کہ بلکہ اس بات کی بھی تردید کر دی ہے
کہ وزیراعظم نریندر مودی نے امریکی صدر سے ایسی کوئی درخواست کی تھی۔ ترجمان بھارتی وزار ت خارجہ رویش کمار نے ٹوئٹر پر اپنے بیان میں کہا ہے کہ ہم نے امریکی صدر کے میڈیا کو دیے گئے بیان میں کہا ہے کہ وہ پاکستان اور بھارت کی درخواست پر مسئلہ کشمیر پر ثالثی کےلئے تیار ہیں۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے امریکی صدر سے ایسی کوئی بھی درخواست نہیں کی۔ بھارت کا اس بارے میں موقف بارے واضح ہے۔ بھارت ہمیشہ سے کہتا رہا ہے کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان تمام مسائل پر بات دونوں کے درمیان ہی ہو گی، پاکستان کے ساتھ کسی بھی قسم کی بات چیت کے لیے پہلے بارڈر پار سے ہونے والی دہشتگردی کو ختم کرنا ہو گا، شملہ معاہدہ اور لاہور ڈیکلیریشن دونوں مملاک کے درمیان باہمی طور پر مسائل کے حل کے لیے بنیاد فراہم کرتی ہے‘‘

تازہ ترین خبریں