تازہ ترین  
جمعرات‬‮   15   ‬‮نومبر‬‮   2018

بیٹی فروخت کرنے والے لالچی باپ نے تنسیخ نکاح،حق مہر ،کفالت مہانہ،جہیز واپسی کا دعوی دائر کروا دیا


ہٹیاں بالا(بیورورپورٹ) چناری کے نواحی گائوں گہل جبڑا میں پیسوں کی لالچ میں اپنی بیٹی فروخت کرنے والے لالچی باپ نے تنسیخ نکاح،حق مہر ،کفالت مہانہ،جہیز واپسی کا دعوی ایڈیشنل ڈسٹرکٹ فیملی جج ہٹیاں بالا جہلم ویلی کی عدالت میں دائر کروا دیا عدالت نے آج بروز ہفتہ فریقین کو طلب کر لیا ۔تفصیلات کے مطابق چناری کے نواحی گائوں گہل جبڑا کے رہائشی غلام دین نے لاکھوں روپے مالیت کے عوض اپنی بیٹی مسماۃ(س) کو منیر ولد گلہ ساکنہ درہ کو فروخت کرکے نکاح پڑھوا دیابعد ازاں رخصتی کرنے سے انکار کرتے ہوئے اپنی بیٹی کے زریعے عدالت میں دعوی دائر کروا دیا عدالت نے آج ہفتہ کے روز فریقین کو پیروی کے لیے طلب کر لیا ہے دوسری طرف ڈپٹی کمشنر ہٹیاں بالا کی ہدایت پر تھانہ پولیس چناری نے لڑکی کی خرید و فروخت کے معاملہ پر دونوں فریقین کو تھانہ طلب کر کے تحقیقات شروع کر دی ہے پولیس تحقیقاتی عمل مکمل کر نے کے بعد رپورٹ ڈپٹی کمشنر ہٹیاں بالا کو پیش کرے گی یاد رہے کہ اسی تنازع پر تقریباچھ ماہ قبل دونوں فریقین کے درمیان ایک معائدہ طے ہوا تھا جس میں دونوں فریقین نے باہمی رضا مندی سے طے کیا تھا کہ لڑکی کے بالغ ہونے پر اس کا والد اس کا شناختی کارڈ بنوا کر اسے رخصت کرے گا اور لڑکی کا شوہر اسکی حق مہر کی رقم اس کے اکا ئونٹ میں جمع کروائے گا لیکن لڑکی کے والد نے معائدہ کی خلاف ورزی کرتے ہوئے تنسیخ نکاح کا دعوی دائر کر دیا زرائع کے مطابق لڑکی کے والد کو با اثر افراد کی پشت پناہی حاصل ہے جوپیسوں کی لالچ میں غریب خاندان کو مزید دبانا چاہتے ہیں عوامی ،سیاسی و سماجی حلقوں نے لڑکی کی خرید و فروخت پر سخت تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہاہے کہ ایسے کام میں ملوث تمام افراد کے خلاف قانون کے مطابق سخت کارروائی عمل میں لائی جائے تانکہ آئندہ کوئی بھی پیسوں کی لالچ میں بچیوں کی خرید و فروخت سے باز رہے




 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں


آج کا مکمل اخبار پڑھیں

تازہ ترین خبریں


کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved