شہید کی موت قوم کی حیات ہے‘ہمہ موڑہ بڑی زرخیر دھرتی ہے ‘ راجہ مشتاق منہاس
  13  ‬‮نومبر‬‮  2017     |      کشمیر

باغ (آئی این پی ) آزادحکومت کے وزیراطلاعات سیاحت وآئی ٹی راجہ مشتاق منہاس نے کہاکہ شہید کی موت قوم کی حیات ہے دنیا کی زندگی اللہ تعالی نے ایک مقصد کے لیے دی ہے جو اس زندگی کے مقصد کوسمجھ کر اللہ کی اطاعت اوررسول پاک کے طریقوں میں زندگی بسر کرکے وہ دوجہانوں میں کامیاب ہوں گے۔ہمہ موڑہ بڑی زرخیر دھرتی ہے جس نے بڑے پڑھے لکھے زندگی کے مختلف شعبوں میں اعلی عہدوں پر فائز سپوتوں کو اس مٹی نے جنم دیا۔زیشان کیانی شہید ،اسد کیانی شہید ،اورساغر کیانی شہید تینوں گہرے دوست تھے۔اوراللہ کے ہاں بھی اگھٹے گئے ۔انہوں نے اپنے علاقے میں بہتر ترقی اورفلاحی کاموں میں ہمیشہ پیش پیش رہے ان کی زندگی کے ادھورے مشن کو ہرممکن پورا کیاجائے گا۔میری ان بھائیوں کیساتھ الیکشن کے دوران ہی شناسائی ہوئی اس کے بعد جووقت ہمارا ایک ساتھ گزاراس کوکبھی بھولانہیں جائیگا۔ہمہ موڑہ درس کیساتھ گراونڈ اوردیگر تمام کام جو میر ے شہید بھائیوں نے اپنے علاقے کے عوام کی سہولیات کے لیے پلان کررکھے تھے وہ سب پورے کیے جائیں گے۔ان شہدا کا خود وارث ہوں ۔ان خیالات کااظہار انہوں نے ہمہ موڑہ کے مقام پر ذیشان کیانی شہید ،اسد کیانی شہید ،ساغر کیانی شہید کی یاد میں منعقدہ فکر آخرت تعزیتی ریفرنس میں بحیثت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا ۔اس تقریب کی صدارت سابق ایڈنیشنل ایڈوکیٹ جنرل راجہ ممتا ذ حسین کیانی نے کی ۔جبکہ تقریب سے سابق وزیرحکومت راجہ محمد یاسین خان ،

سابق امیدوار قانون ساز اسمبلی حلقہ وسطی باغٖ راجہ محمد خورشید خان،مولانا امین الحق فاروقی ،مولانا سید تجمل حسین شاہ ،مفتی ساجد حسین شاہ،سردارعبدلرشید چغتائی ،راجہ سعید انقلابی ،حاجی عبدالرحکیم ،راجہ عبدالحفیظ کفل گڑھوی ،پروفیسر منیر احمد کیانی ،عظمت حسین منہاس ،پرنسپل (ر) راجہ عتیق احمد خان،اوربہت سے دیگر مقررین نے خطاب کیا۔اس تقریب کے دوسیشن ہوئے پہلے سیشن کے مہمان خصوصی وزیراطلاعات راجہ مشتاق منہاس تھے ،جبکہ دوسرے سیشن کے مہمان خصوصی مولانا سید تجمل حسین شاہممتاذ عالم دین اورمفکر اسلام تھے۔ اس کی صدارت حضرت مولانا منصور احمد کیانی نے کی ۔فکر آخرت کانفرنس سے خطا ب کرتے ہوئے مقررین نے کہاکہ یہ دنیا عارضی ہے اورمختصر عرصہ کے لیے انسان اس دنیامیں رہ رہاہے ۔جس نے اللہ کے حکم اورنبی آخرت ؐکے طریقو ں پر زندگی بسر کی وہ دونوں جہانوں میں کامیاب ہوگیا ۔ایسے لوگ جنھوں نے اپنے اللہ کے حکم کوپورے کرتے ہوئے نبی پاک کے طریقوں پر زندگی گزاری اورمخلوق کی خدمت کرتے ہوئے زندگی بسر کی قیامت کے روز وہ اس طرح اٹھائے جائیں گے کہ نظریات والے انجام سے بے خبر ہوتے ہیں۔جن کا تعلق اپنے اللہ کیساتھ قائم ہوا انہیں دنیامیں کوئی طاقت کمزور نہیں کرسکتی ۔ جسم ختم ہوجاتا ہے مگر کردار کبھی ختم نہیں ہوتا۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں






  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

کشمیر

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved