آٹھ مقام،روزانہ کی بنیاد پرسینکڑوں قیمتی درختوں کا قتل عام ہونے لگا
  7  دسمبر‬‮  2017     |      کشمیر

آٹھ مقام (آئی این پی) محکمہ جنگلات نیلم کی ملی بھگت کمپارٹ نمبر 16 فلاکن میر پورہ دیودار کے قیمتی درختان کی کٹائی جا ری روزانہ کی بنیاد پر سیکڑوں قیمتی درختان کا قتل عام کیا جا رہا ہے تفصیلات کے مطابق ٹھیکدار عاشق حسین شاہ نے بندوبست رقبہ کی حد تک میر پورہ فلاکن کمپارٹ نمبر 16میں درختان کاٹنے کی اجازت حاصل کی ہوئی ہے ٹھیکدار اس کی آڑ میں محکمہ کے اہلکاران فاریسٹ گارڈ راجہ مسعود خان کی ملی بھگت سے موری کھولیا میں بڑے پیمانے پر قیمتی دیودار کے درختان کی کٹائی کر رہا ہے جس سے محکمہ جنگلات کو کروڑوں کا نقصان ہو رہا ہے عوام علاقہ نے وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر خان، وزیر جنگلات سردار میر اکبر ، جی او سی مری ، چیف سیکرٹری سے اپیل کی ہے کہ اس کا سختی سے نوٹس لیں اور زمہ داران کے خلاف کاروائی عمل میں لائی جائے ۔عوام علاقہ نے محکمہ جنگلات میں ریسکیو 1122کے قیام کا مطالبہ کر دیا محکمہ جنگلات میں ریسکیو1122کا قیام جلد عمل میں لایا جو فوری ان اہلکاران کے خلاف کرے جو جنگل کو نقصان پہنچاتے ہیں عوام علاقہ نے تحریر طور پر احتساب بیورو کو نقصان جنگل ہونے کی درخواست پیش کی اور نشاندھی بھی کروائی مگر کوئی کاروائی نہ کی گئی ۔اس کے علاوہ عوام علاقہ نے بذریعہ میڈیا بھی اعلیٰ حکام کی توجہ اس طرف دلانے کی کوشش کی مگر دو ہفتوں سے زائد کا وقت گزرنے کے باوجود محکمہ کا کوئی بھی اہلکار موقع پر نہ پہنچ سکا اور نہ کوئی کاروائی عمل میں لائی گئی بذریعہ عملہ منڈیاں دیودار مونڈی جلائی گئی اور بورا اور چھلکا موقع سے صاف کیا جا رہا ہے ۔آفیسران بالا کی ہدایت ہے کہ موقع سے صفائی کرو تا کہ ہم لوگ موقع پر جا سکیں ۔باوثوق زرائع سے معلوم ہے کہ

فاریسٹ گارڈ راجہ مسعود عوام علاقہ کو دھمکیاں دے رہا ہے کہتا ہے کہ ااحتساب بیورور میں دی گئی درخواست کو واپس لو اور جو خبریں شائع کروائی ہیں ان کی تردید کرو اگر ایسا نہ کرو گے تو اس کے نتائج بھیانک ہونگے اور جب کوئی شخص نقصان جنگل کے خلاف آواز اٹھاتا ہے تو اس کے خلاف پرت چاک کر دیئے جاتے ہیں اور سنگین نتائج کی دھمکیاں دی جاتی ہیں گزشتہ دنوں قیوم ولد شیر علی نے نقصان جنگل کے حوالے سے شکایت کی تو اس کے خلاف پرت کاٹ کر اس کو سزا دی گئی ۔ اس لئے لوگ ان کے خلاف شکایات کرنے سے گھبراتے ہیں ۔عوام علاقہ نے مطالبہ نے کہا ہے کہ ایک بار پھر ہم اعلیٰ حکام کی توجہ اس طرف مبذول کروانا چاہتے ہیں کہ وہ زمہ داران کے خلاف کاروائی کرتے ہوئے کروڑوں کا نقصان جنگل کروانے والے افراد کے خلاف کاروائی کرتے ہوئے گرفتاری کا حکم دیں ورنہ کسی بھی ناخوشگوار واقع کی زمہ داری محکمہ جنگلات کے آفیسران پر ہو گی ۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

  قائد اعظم محمد علی جناح  
  اسکندر مرزا  
  لیاقت علی خان  
  ایوب خان  
آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

کشمیر

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved