نعمانپورہ ،باغ انتظامیہ کا فوٹو سیشن معمول بن گیا
  20  جنوری‬‮  2018     |      کشمیر

نعمانپورہ (نمائندہ اوصاف) باغ انتظامیہ کا فوٹو سیشن معمول بن گیا ، نا جائز تجاوزات ، گراں فروشوں اور قبضہ مافیا کے خلاف کاروائی خواب بن کر رہ گئی ، پنجاب فوڈ اتھارٹی کیطرف سے بلیک لسٹ قرار دی جانے والی کمپنیوں کی غلیظ اور گندی اشیاء کی فروخت کے لیے باغ محفوظ منڈی بن چکا ہے ، نا جائز تجاوزات کیوجہ سے باغ کی شاہرائیں گلیوں میں تبدیل ہو چکی ہیں غلیظ اور گندی اشیاء خورد و نوش کے استعمال سے باغ میں کینسر ، ہارٹ اٹیک ، بلڈ پریشر ، ہپاٹیٹس اور معدے کے السر کی بیماریوں نے خطر ناک حد تک اضافہ ہو رہا ہے ، باغ کی نسبت راولاکوٹ میں دو نمبر گھی ، دو نمبر دودھ ملاوٹ شدہ لال مرچ ، سمیت متعدد اشیاء خورد و نوش پر پنجاب فوڈ اتھارٹی کی پابندی کے بعد راولاکوٹ کی انتظامیہ نے بھی پابندی لگا رکھی ہے ، باغ کے اندر انتظامی عہدوں پر نا اہل مقامی آفیسران کی تعیناتی کیوجہ سے دو نمبر اشیاء خورد و نوش کی فروخت دھڑلے سے جاری ہے ، تجاوزات مافیا کے خلاف ایک ماہ قبل فوٹو سیشن کے لیے شہر میں واک کیا گیا ، قبضہ اور تجاوزات مافیا کو وراننگ دینے کیساتھ ساتھ سرخ نشانات لگا کر تجاوزات کو مارک بھی کیا گیا اور ایک ہفتے کے اندر نا جائز تجاوزات کو ہٹانے کا اعلان کیا گیا مگر نا اہل انتظامیہ نے با اثر مافیا کے سامنے گٹھنے ٹیک دیئے ،

باغ انتظامیہ فوٹو سیشن کے لیے چند ریڑھی بانوں اور تھیڑے والوں کے خلاف کاروائی کر کے اپنے آپ کو میڈیا میں زندہ رکھتی ہے ، تجاوزات مافیا نے باغ کے متعلقہ اداروں کی جانب سے دی جانے والی این او سی ذمہ داران کو دکھائی تو اداروں کے ذمہ داران کاروائی کے بجائے بھیگی بلی بن گئے ماضی میں باغ میں تجاوزات مافیا نے اداروں کے ذمہ داران کی مٹھیاں گرم کر کے تجاوزات قائم کیں جس کو اب ہٹانا اداروں کے بس میں نہیں رہا باغ میں کسی بھی دکان پر کئی کوئی ریٹ لسٹ آویزاں نہیں باغ میں جنگل کا قانون رائج ہے با اثر مافیا جہاں چاہے قبضہ جما سکتی ہے اور جہاں چاہے تجاوزات لگا سکتی ہے باغ کے شہریوں اور عوامی حلقوں نے مطالبہ کیا ہے کہ باغ دو نمبر اشیاء کی فروخت کا مرکز بن چکا ہے تجاوزات کو ختم کرنے کا قانون تو موجود ہے مگر عمل درآمد کروانے والا کوئی نہیں لوکل آفیسران اپنی ذمہ داریوں کے بجائے ذاتی مفادات اور مقاصد کے لیے کام کر رہے ہیں باغ میں دیانتدار اور با صلاحیت آفیسران کو تعینات کیا جائے تا کہ انسانی جانوں کیساتھ کھلواڑ کا سلسلہ بند ہو اور باغ کے شہریوں کو ریلیف مل سکے ۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کار ٹونز

کشمیر

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved