پلندری،آزاد کشمیر حکومت ملازم دشمنی پالیسی افسوسناک ہے
  13  فروری‬‮  2018     |      کشمیر

پلندری (نمائندہ اوصاف)آزاد کشمیر حکومت ملازم دشمنی پالیسی افسوسناک ہے ہر مہینے ملازمین کی تنخواہوں سے کسی نہ کسی فنڈ کے نام پر بھاری رقم کی کٹوتی حکومت کا وطیرہ بن گیا ہے ایسے لگتا ہے حکومت اپنے سارے خسارے ملازمین کی تنخواہوں سے پورا کرنا چاہتی ہے ایسی جبر کی کٹوتیاں ہم ہر گز برداشت نہ کریں گے ان خیالات کا اظہار ٹیچرز آرگنائزیشن ضلع سدھنوتی کے نائب صدر سردار شاہد اقبال نے پلندری کے مقام پر اساتذہ کی ایک میٹنگ میں خطاب کے دوران کیا اُنہوں نے کہا ہر مہینے ایک نئی کٹوتی کے نام پر اساتذہ اور دوسرے ملازمین تنخواہوں سے بڑے پیمانے پر کٹوتی افسوسناک اقدام ہے ایسے لگتا ہے حکومت کا بس صرف ریاست کے ملازمین پر ہی چلتا ہے سکول ٹیچرز کو حکومت وقت معلوم نہیں کس انتقام کا نشانہ بنائے ہوئے ہے ایک طرف ترقیابی کیلئے محکمانہ کوٹے میں بڑے پیمانے پر کمی کرکے اساتذہ کی ترقیابی کی راہیں بند کی جارہی ہیں تو دوسری طرف مختلف پالیسیوں کے

نام پر ترقیابیوں کو مشکل بنایا جارہا ہے کیا یہ ساری پالیساں صرف سکول ٹیچرز کیلئے ہی ہونا چائیں انہوں نے کہا اساتذہ آزاد کشمیر کے ساتھ یہ حکومتی رویہ افسوس ناک ہے اگر تنخواہوں سے زبر دستی اور من مانی یہ کٹوتیاں ختم نہ کی گئیں تو سارے آزاد کشمیر کے اساتذہ اور دوسرے ملازمین احتجاج پر مجبور ہوں گے انہوں نے ذمہ داران سے مطالبہ کیا کہ اساتذہ کی ترقیابی کیلئے کوٹہ سابقہ پوزیشن پر بحال کرتے ہوئے نئی پالیسی میں اصولی طور پر طے شدہ دو سال کی نرمی پر فوری طور پر عمل کرتے ہوئے اساتذہ کے پروموشن کیے جائیں اور اساتذہ جن کے پر وموشن پچھلے دو سالوں سے ہوئے ہیں ترقیاب کرتے ہوئے اُن کے ساتھ زیادتی کا ازالہ کیا جائے ۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کشمیر

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved