کوٹلی،محتاط اندازے کے مطابق زہریلا پانی پینے سے اس وقت تک 50سے زائد اموات ہوچکی ہیں
  20  اپریل‬‮  2018     |      کشمیر

کوٹلی (وقا ئع نگار)مسلم کانفرنس کے مرکزی راہنماء مجاہد اول کے دیرینہ اور قابل اعتماد ساتھی میاں محمد اکرم و دیگر معززین نے کوٹلی شہر میں زہریلے پانی کی فراہمی پرتشویش کا اظہار کرتے ہوئے اسے بیوروکریسی اور آزاد حکومت کی سنگین غفلت کا نتیجہ قرار دیا اور سیول سوسائیٹی سے مطالبہ کیا کہ حکمرانوں اور کرپٹ افسران کو غفلت کی نیند سے جگانے کے لئے کوٹلی کے شہری بلا تحضیص ایک پیچ پر جمع ہو کر ان کرپٹ عناصر کا ناطقہ بند کردیں۔انہوں نے کہا کہ محتاط اندازے کے مطابق زہریلا پانی پینے سے اس وقت تک 50سے زائد اموات ہوچکی ہیں۔جن کی ذمہ داری حکومت اور محکمہ پبلک ہیلتھ پر عائد ہوتی ہے۔ جلد نامور قانون دان محمد الیاس بٹ ایڈووکیٹ،اور (ر)جج چوہدری اسحاق آرائیں پرمشتمل لیگل پینل تشکیل دے کر اپنے حق کے لئے عدالت کے دروازے پر دستک دینگے۔کیوں کہ حکومت اور اداروں پرہمیں کوئی بروسہ نہیں ہے۔وہ گزشتہ روز اپنے آفس میں اخبار نویسوں سے گفتگو کر رہے تھے۔انہوں نے کہا کہ آج کے جدید دور میں لوگوں کو پینے کا صاف پا نی میسر نہیں ہے۔اس سے بڑھ کر ظلم کیا ہوگا کہ پانی کی پرانی پائپ لائنیں ابھی تک تبدیل نہیں کی گئیں۔قبل اس کے کہ لوگ اپنے ہاتھ ارباب اختیار کے گریبانوں تک لے جائیں متعلقہ ذمہ داران اپنی اصلاح کر لیں۔پیپلز پارٹی کی سٹڈی سرکل کے سابق چیئرمین اور پی وائی او کے سابق رہنماء ایم نصیر شاکر نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ بلدیہ کوٹلی کے

مجسٹریٹ کبھی کبھی بازار میں صفائی چیک کرتے ہیں مگر ہوٹلوں کے وہ ڈرم جن میں پانی رکھا جاتا ہے انہیں کبھی چیک نہیں کیا گیا جو ایک بار بھرے جاتے ہیں تو کئی کئی ماہ صاف نہیں کیے جاتے ،اسی طرح پرائیویٹ اور سرکاری سکولز میں بھی پینے کا صاف پانی میسر نہیں ہے یا سکول انتظامیہ اس جانب توجہ نہیں دیتی،بیکریوں اور ٹھیلوں پر ناقص اشیا فروخت کی جاتی ہیں اور سب اچھا ہے کہ رپورٹ دی جاتی ہے ۔انہوں نے کہا کہ ہیپا ٹائٹس سی ایک خوفناک مرض ہے جس نے اہلیان کوٹلی کو اپنی لپیٹ میں لے رکھا ہے اس حوالہ سے محکمہ صحت اور محکمہ پبلک ہیلتھ قطعی طور پر ناکام ہیں۔محمد ارسلان قریشی نے کہا کہ سنا ہے کہ کوٹلی کی پائپ لائنز حافظ اسلم کے دور میں بچھائی گئی تھیں جو ابھی تک تبدیل نہیں ہوئی ان لائنز سے فراہم کیا جانے والا پانی ہیپاٹائٹس کی ایک بڑی وجہ ہے اور فوری اس جانب توجہ نہ دی گئی تو ایک بڑا انسانی المیہ جنم لے سکتا ہے۔


اس خبر کے بارے میں اپنی رائے دیجئے
پسند آئی
 
ٹھیک ہے
 
کوئی رائے نہیں
 
پسند ںہیں آئی
 


 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں





  اوصاف سپیشل

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

آج کا مکمل اخبار پڑھیں

کشمیر

کالم /بلاگ


     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved