تازہ ترین  
پیر‬‮   21   جنوری‬‮   2019

آزاد کشمیر میں ضرورت کے مطابق گندم موجود ہے،محمد نواز خان


سہنسہ( نمائندہ خصوصی ) ڈائریکٹر خوراک آزاد کشمیر راجہ محمد نواز خان نے کہا کہ آزاد کشمیر میں ضرورت کے مطابق گندم موجود ہے گودام میںروزانہ کی بنیاد پر گندم آبھی رہی ہے اور سپلائی بھی کی جارہی ہے ۔ نہ آٹے کی کہیں قلت ہے اور نہ ہی ملوں میں گندم کی سپلائی کم ہورہی ہے ۔ وفاق سے ملنے والی پرانی گندم ہم نے لینے سے انکار کر دیا ہے ۔ اب روزانہ کی بنیاد پر تازہ سٹاک لے رہے ہیں ۔ اور وہی سپلائی کر رہے ہیں ۔ وزیر خوراک سید شوکت حسین شاہ کا سوروپے کا آٹا سستا کر نا عوام کے لیے احسان عظیم ہے جسے فراموش نہیں کیا جا سکتا ۔ محکمہ خوراک آزاد کشمیر پاسکو سے تین لاکھ ٹن گندم سالانہ خریدتا ہے جو قیمت پاسکو کو براہ راست ادا کی جاتی ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے میڈیا سے ٹیلی فونک گفتگو میںکیا ۔ انھوں نے کہا کہ آزاد کشمیر میں آبادی کی ضرورت سالانہ پانچ لاکھ ٹن غلہ ضرورت ہوتی ہے ۔ باقی گندم کی کمی مقامی فصلوں سے اور غیر ضروری ذرائع سے پوری ہورہی ہے تاجرحضرات اپنے فائدے کے لیے پاکستان سے سستا آٹا لاتے ہیں مگر وہ غیر معیار ی ہوتا ہے جو پیٹ کی بیماریوں کا موجب بنتا ہے ۔ انھوں نے کہا کہ آزاد کشمیر میں کہیں بھی آٹے کی قلت نہیں ہے اور نہ ہی غیر معیاری آٹا ہم ملوں سے وصول کر تے ہیں ۔ آٹے کی مقدا ر کوالٹی اور وزن کی کمی پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جاتا اور نہ ہی کسی کو رعائت دے سکتے ہیں ۔ انھوں نے کہا کہ آزاد کشمیر کی فلور ملوں کو مالی بحران سے بھی نکال دیا اور روزانہ کی بنیاد پر ضرورت کے مطابق گندم کی سپلائی کو یقینی بنا رکھا ہے ۔ وفاق ہمیں ڈیمانڈ اور ضرورت کے مطابق گندم سپلائی کر رہاہے ۔ آٹے کی سپلائی اور گندم کی کمی کہیں بھی نہیں آنے دیں گے ۔




 سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں


آج کا مکمل اخبار پڑھیں

تازہ ترین خبریں




     
     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ روزنامہ اوصاف محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Daily Ausaf. All Rights Reserved