01:00 pm
  اقوام عالم کی مسئلہ کشمیر پر  خاموشی  دو ایٹمی قوتوں میں جنگ کا باعث  بن سکتی ہے، چوہدری یاسین

اقوام عالم کی مسئلہ کشمیر پر خاموشی دو ایٹمی قوتوں میں جنگ کا باعث بن سکتی ہے، چوہدری یاسین

01:00 pm

بین الاقوامی برادری مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے کردار ادا کرے ورنہ اقوام متحدہ کی اہمیت ختم ہوجائے گی، قائد حزب اختلاف بھارت نے ہوش کے ناخن نہ لئے تو کوئی بھی چنگاری تباہی کا باعث بن کر پوری دنیا کو اپنی لپیٹ میں لے لے گی کوٹلی (وقائع نگار )آزاد جموں وکشمیر قانون ساز اسمبلی میں قائد حزب اختلاف چوہدری محمد یاسین نے کہا ہے کہ بین الاقوامی برادری کی خاموشی دو ایٹمی قوتوں میں جنگ کی وجہ بن سکتی ہے اور کوئی بھی چنگاری تباہی کا باعث بن سکتی ہے جو پوری دنیا کو اپنی لپیٹ میں لے لے گی دنیا یہ بات سمجھے کہ اگر بھارت نے ہوش کے ناخن نہ لیے تو حالات خرابی کی طرف جائیں گے اس لیے بین الاقوامی برادری مسئلہ کشمیر کو حل کرنے کیلئے اپنا کردار ادا کرے وگر نہ روز بروز اقوام متحدہ کی اہمیت وافاددیت سوالیہ نشان بنتی جا رہی ہے اقوام عالم مسئلہ کشمیر پر اپنی خاموشی توڑے دو ایٹمی طاقتوں کے درمیان اس حل طلب مسئلے کو حل کرنے کے لئے سلامتی کونسل کے اراکین اپنا کردار ادا کریں ایسا نہ ہو کہ کوئی چنگاری تباہی کا باعث بن جائے وہ آج یہاں مختلف وفود سے گفتگو کر رہے تھے انہوں نے کہا کہ اپوزیشن تحریک آزادی کشمیر کو اجاگر کرنے کیلئے بھرپور کردار ادا کررہی ہے ہم نے دنیا کے ہر فورم پر کشمیریوں کی آواز کو بلند کیا اور مقبوضہ کشمیر میں ہونے والے مظالم کو بے نقاب کر کے بھارت کے نام نہاد سیکولر ازم کا پردہ چاک کیا ، اپوزیشن نے یورپ میں خاص طور پر بھارت کے خلاف بڑے بڑے مظاہرے کر کے اور سیمینارز کے ذریعے مسئلہ کشمیر کو اجاگر کیا ہے ، حکومت کو چاہیے کہ وہ پارلیمانی وفود کے علاوہ ہر مکتبہ فکر کے وفود بیرون ملک بھیجے جو مسئلہ کشمیر پر گرفت رکھتے ہوں وفود میں دانشور صحافی اور حریت کانفرنس کے رہنماؤں کو شامل کیا جائے ،آج دنیا میں میڈیا کی جنگ ہے آزاد حکومت کو اس جانب توجہ دینی چاہیے، جموں وکشمیر لبریشن سیل کوایمپلائمنٹ ایکسچینج بنانے کے بجائے الیکٹرانک میڈیا کے ذریعے بھارتی مظالم بے نقاب کرنے کیلئے کام کرنا چاہی،جو مسلم ممالک یہ سمجھتے ہیں کہ بھارت ان کا اچھا بزنس پارٹنرز ثابت ہو سکتا ہے وہ خوش فہمی کا شکار ہیں۔انہیں بھارت کے ماضی پر نگاہ ڈالنی چاہیے جس کے ہمسایہ ممالک پاکستان ہو یا سری لنکا بھوٹان ہو یا نیپال تمام ممالک میں مداخلت اور دہشتگردی کے ذریعے عدم استحکام پیدا کرنے کی کوششیں کر رہا ہے بلوچستان میں پکڑے جانے والوں نے بھی تربیت بھارت میں حاصل کی ہے اور سری لنکا میں ہونے والے حالیہ دھماکوں کے تعلق بھی بھارت سے جا ملے ہیں۔بھارت ایک دہشتگرد ریاست کی صورت اختیار کر رہا ہے جہاں اگر ہمسایہ ممالک محفوظ نہیں تو بھارت میں بسنے والی اقلیتیں بھی عدم تحفظ کا شکار ہیں بھارتی عزائم توسیع پسندانہ ہیں اس کی نظریں گلف کی ریاستوں پر ہیں اسی وجہ سے وہ اپنی بحریہ کو مضبوط بنا رہا ہے چاربیار پورٹ پر سرمایہ کاری بھی بھارتی عزائم کا حصہ ہیں جو اسلامی ممالک کیلئے سمجھنا انتہائی ضروری ہے، مسئلہ کشمیر سلامتی کونسل کے ایجنڈے پر سب سے دیرینہ مسئلہ ہے اقوام متحدہ کشمیریوں سے کیا گیا وعدہ پورا کرنے میں ناکام رہی ہے جو اقوام متحدہ کے دوہرے کردار کو سامنے لاتی ہے شرقی تیمور سمیت بہت سے مسئلے حل ہو سکتے ہیں تو مسئلہ کشمیر کیوں حل نہیں ہو سکتا ،مسئلہ کشمیر اب مغربی ممالک میں سمجھا جانے لگا ہے ،دنیا نے آنے والے وقت کا ادراک نہ کیا تو خوفناک سانحہ ہو سکتا ہے ، پاکستان اور بھارت ایٹمی قوتیں ہیں اور خطے میں بھارت نے کشیدگی پیدا کر رکھی ہے کنٹرول لائن پر نہتے شہریوں پر خلاف ورزی تو بھارت نے معمول تھا لیکن بالاکوٹ کے مقام پر بھارتی طیاروں کی طرف سے میزائل پھینکنا بین الاقوامی سرحدوں کی کھلی خلاف ورزی تھی لیکن اس معاملے پر بھی دنیا کی خاموشی کی وجہ سے پاکستان کو جوابی کارروائی کرنی پڑی اور افواج پاکستان پاک فضائیہ نے بھارتی جہازوں کو گرا کر یہ واضح پیغام دے دیا کہ کسی قسم کی شرانگزی برادشت نہیں کی جائے گی ۔ چوہدری یاسین

تازہ ترین خبریں