02:22 pm
حکومت متاثرین کنٹرول لائن کے مسائل حل نہیں کر سکی،لطیف رضا

حکومت متاثرین کنٹرول لائن کے مسائل حل نہیں کر سکی،لطیف رضا

02:22 pm

حکومت متاثرین کنٹرول لائن کے مسائل حل نہیں کر سکی،لطیف رضا مسائل کے حل نہ ہونے پرکھلانہ چکوٹھی سے مظفرآباد تک لانگ مارچ کرینگے چکوٹھی (نمائندہ خصوصی)تحریک انصاف آزادکشمیر کے سنٹرل ایگزیکٹیو کمیٹی کے ممبر مرکزی رہنما چوہدری لطیف رضا نے کہا ہے کہ حکومت آزادکشمیر لائن آف کنٹرول کے علاقوں پر بسنے والے عوام کے مسائل حل کرنے میں مکمل ناکام عوام کو سہانے خواب سبز باغ اور ہوائی اعلانات کے ذریعہ جھوٹی تسلیاں دے کر آخر کب تک مطمن کیا جاتا رہے گا بھارتی بلا اشتعال گولہ باری فائرنگ مشک نامساعد حالات میں زندگی بسر کرنے والے دفاع وطن کے لیے اپنے گھر بار کو چھوڑنے کے بجائے پاک فوج کے شانہ بشانہ ملکی سلامتی اپنی سرحدوں کی حفاظت کرنے دشمن کے ناپاک عزائم کو خاک میں ملانے اپنی جانوں کا قیمتی نذرانہ پیش کرنے والے ایل او سی کے عوام کے ساتھ حکومت رویہ قابل افسوس ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے اوصاف سے گفتگو کرتے ہو ہے کیا انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان نے دوران الیکشن عوام سے جو وعدے کیے آج تک پورے نہیں ہوئے ستم ظریفی کا عالم وزیراعظم نے جو انتظامی آفیسران اپنے آبائی ضلع میں تعینات کیے انہوں نے عوام کے مسائل حل کرنے کے بجائے عوام کے لیے مسائل پیدا کیے وزیراعظم بتائیں؟ ایل او سی کے عوام کے لیے خصوصی پیکچ کدھر ہے کیا ایل اوسی کے علاقوں میں کمیونٹی بینکرز تعمیر ہو گے؟ کھلے آسمان تلے تعلیم حاصل کرنے والے بچوں کو چھت فراہم کر دی گئی؟ ہسپتالوں میں بہترین طبی سہولیات اور سٹاف مکمل فراہم کر دیا گیا؟ بہترین سفری سہولیات کے پیش نظر سٹرکیں پختہ ہو گئیں؟برساتی نالوں پر پل تعمیر ہو گے؟ بلدیاتی الیکشن ہو گے؟ کرپشن کا خاتمہ ہو گیا؟ کابینہ کا سائز کم ہے؟ٹوٹی نلکہ کی سیاست ختم ہو گئی؟ پسند ناپسند اقراپروری کا خاتمہ ہو گیا؟ عوام کو انکے گھر تک انکی دیلہز پر مسائل ہو رئے ہیں؟ دفاتر میں عام آدمی کے مسائل حل ہو رئے ہیں کارکنان کی ایڈجسمنٹ ہو گئی؟ وزیراعظم نے جو الیکشن میں عوام کو سبز باغ دکھائے پورے ہوئے وزیر اعظم نے حلقہ میں کون کون سے میگا پراجیکٹ شروع کیے؟ عوام وزیراعظم سے سوال کرتے ہیں حلقہ پانچ کے عوام کے مسائل آج حل نہ ہوئے کبھی حل نہیں ہونگے کل تک راجہ فاروق حیدر خان فنڈز اور اختیارات کا رونا روتے تھے آج انکے پاس ریاست کا بڑا عہدہ چیف ایگریکٹیو وزرات عظمی پر فائز ہیں آج ان کے لیے عوام کے مسائل حل کرنا مشکل نہیں پھر کیوں مسائل حل نہیں کر رہے؟ وزیراعظم کے اپنے حلقہ میں سابقہ حکومتوں میں آج سے کئی گنا بہتر عوامی مسائل حل ہوتے تھے آج وزیر اعظم بھی اسی حلقہ سے مگر عوام بے یارومددگا ہیں عوام نے الیکشن میں وزرات عظمی کے نام پر بڑھ چڑھ کر بھاری مینڈیٹ دیا کہ اب ہمارے مسائل حل ہو نگے۔مگر وزرات عظمی کے نام پر ووٹ حاصل کرکے عوام کو اپنی نظروں سے اوجھل کر دیا گیا ڈپٹی کمشنر ہٹیاں بالا نے متاثرین کے نام پر اپنے آفس میں جو بندر بانٹ کی وہ متاثرین ایل او سی کے ساتھ مذاق اسکی مذمت کرتے ہیں ایل او سی عوام حکومت آزادکشمیر بالخصوص وزیر اعظم آزادکشمیر اور ڈپٹی کمشنر ہٹیاں سے پوچھتے ہیں کہ کیا بھارتی گولہ باری میں چند افراد ہی متاثر ہوئے۔باقی لوگوں کا کیا قصور ہے۔کیا انکا یہی قصور ہے کہ وہ گھر بارچھوڑنے حکومت پر بوجھ بننے مہاجر کیمپوں کا رخ کرنے بھارتی گولہ باری میں علاقہ چھوڑ کر دشمن کے عزائم کو تقویت دیکر دربدر نہیں ہوئے تب حکومت اور انتظامیہ نے انکو نظرانداز کر دیا ڈپٹی کمشنر کا رویہ بھی عوام کے ساتھ سہی نہیں ہے انہوں نے کہا کھلانہ ویلی آر ایچ سی ہسپتال میں آر ایچ سی لیول کا مکمل سٹاف اور سہولیات فراہم کی جائیں نام آر ایچ سی مگر سہولیات بی ایچ یو سے بھی کم ہیں ایل او سی کے علاقوں میں زلزلہ میں جو عمارتیں تباہ ہوئیں سکولز کی عمارتیں تعمیر کی جائیں گرلز ہائیر سیکنڈری سکول کی عمارت تعمیر سمیت اسکا سٹاف مکمل کیا جائے بوائز انٹر کالج کھلانہ کی زمین ایوارڈ ہوئے کئی سال گزر چکے اسکی عمارت تعمیر نہیں ہوئی لنک رابط سڑ کیوں کا برا حال ہے سیاسی انتقام کے طور پر ملازمین کے تبادلہ جات بند کیے جائیں بانڈی بالا بوائز مڈل سکول کی بحالی کا نوٹفکیشن جاری ہونے کے باوجود کلاسز کا اجرا نہ ہونا سٹاف مہیا نہ کرنا سمجھ سے بالا تر ہے انہوں نے کہا مجاہد اول سردار عبدالقیوم خان کے دور حکومت ایک نوٹفکیشن کے زریعے ایل او سی کے علاقوں کو آفت ذدہ قرار دیتے ہویے چھوٹے ملازمین گریڈ ایک سے سات تک مقامی یونین کونسلز سے ہی تقرری وتبادلہ عمل لانے میں لانے کا حکم جاری کیا گیا مگر بد قسمتی سے آج بھی کھلانہ ویلی میں بڑی تعداد موجود ہیجو مقامی لوگوں کا حقوق پر شب خون مارتے ہوئے چھوٹے ملازمین کی جو گریڈ ایک سے سات تک غیر مقامی دوردراز کے علاقوں سے تعینات کیا گیا ہے جن کو اپنی اپنی یونین کونسلز مقامی سطح پر تعینات کیا جائے انہوں نے کہا انشا اللہ ضرورت پڑنے پر ایک مرتبہ پھر ایل او سی کے عوام کے مسائل کے حل کے لیے کھلانہ چکوٹھی سے مظفرآباد لانگ مارچ کرنے سے بھی گریز نہیں کیا جائے کیا گا۔ ایل او سی

تازہ ترین خبریں