11:21 am
مقبوضہ کشمیرپرعالم اسلام کی خاموشی لمحہ فکریہ ہے،شیخ عقیل

مقبوضہ کشمیرپرعالم اسلام کی خاموشی لمحہ فکریہ ہے،شیخ عقیل

11:21 am

مقبوضہ کشمیرپرعالم اسلام کی خاموشی لمحہ فکریہ ہے،شیخ عقیل بیس کیمپ میں حقیقی آزادی کی بات کیجائے تو پابندی عائد کردی جاتی ہے بھارت سےمذاکرات کی بھیک مانگنے کےبجائےاہل کشمیر کی مدد کی جائے مظفرآباد (نمائندہ خصوصی) نائب امیر جماعت اسلامی شیخ عقیل الرحمان ایڈووکیٹ نے کہا ہے کہ بھارت تسلسل کیساتھ مقبوضہ کشمیر میں مسلمانوں کا قتل عام کر رہا ہے ،کوئی روکنے والا نہیں ہے ،حکومت پاکستان نے جو مذاکرات کی رٹ لگائے ہوئے ہے جبکہ بھارت نہ مانے والی عمل پیرا ہے ،بھارت سے مذاکرات کی بھیک مانگنے کے بجائے اہل کشمیر کی مدد کی جائے ،بھارت خود راستہ پر آجائے گا،انہوں نے کہا کہ عالم اسلام کی خاموشی لمحہ فکریہ ہے ۔او آئی سی کا اجلاس بھی مسلمانوں کے مسائل حل کرنے میں ناکام کررہا ،یہی وجہ ہے کہ فلسطین کا مسئلہ اور کشمیر کا بھی مسئلہ آتش فشاں بننے ہوئے ہیں اور عالم اسلام گہری خواب میں مبتلا ہے ،ان خیالات کا اظہار انہوں نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔انہوں نے کہا کہ حکومت پاکستان اپنی زمہ داری ادا کرنی چاہیے اور کشمیریوں کی ٹھوس مدد کرنی چاہیے ۔اگر پاکستان ٹھوس بنیادوں پر کشمیریوں کے مدد کرے اور عملاً اُن کے ساتھ تعاون کرے تو کشمیری بہت جلد انڈیا سے آزادی حاصل کر لیں گے ،انہوں نے کہا کہ گزشتہ ماہ مبارک میں بھی کشمیریوں کا تسلسل کے ساتھ قتل عام ہوتا رہا ،اور پاکستان میں مسلک کی زنجیریں پہن رکھی ہیں اور حکومت آزادکشمیر بھی مسلک کا شکار ہو چکی ہے اور تحریک آزادکشمیر کو پس پشت ڈال رکھی ہے اگر بیس کیمپ میں کوئی حقیقی آزادی کی بات کرتا ہے تو اُس پر پابندی عائد کر دی جاتی ہے ،انہوں نے کہا کہ اس تحریک کا مقبوضہ کشمیر میں منفی اثر پڑا رہا ہے۔اُن کا مزید کہنا تھا کہ حکومت پاکستان مسئلہ کشمیر کو اجاگر کرنے میں اپنا کردار اد ا کرے۔ مقبوضہ کشمیر میں ہونے والے ظلم کیخلاف آوازبلند کرے اور کشمیریوں کی پشت پر کھڑا ہو کر کشمیریوں کا بھرپور ساتھ دے ۔ عقیل

تازہ ترین خبریں