12:02 pm
منی لنڈن میں قائم پرائیویٹ سکولز مالکان نے انت مچادی

منی لنڈن میں قائم پرائیویٹ سکولز مالکان نے انت مچادی

12:02 pm

میرپور(ڈسٹرکٹ رپورٹر)منی لنڈن میں قائم پرائیویٹ سکولز مالکان نے انت مچادی۔ ضلعی اور سرکاری تعلیمی انتظامیہ کے افسران نے بھی پرائیویٹ سکولز مالکان کو لوٹ کھسوٹ حکومتی احکامات اور پالیسیوں کو جوتے کی نوک پر رکھ کر سکولز اور پرائیویٹ کالجز میں
داخل طلبہ و طالبات کے والدین کی جیبیں بھاری بھرکم فیسوں کے ذریعے خالی کرنے، پرائیویٹ تعلیمی اداروں میں بچوں کو پڑھانے والے میل اور فی میل اساتذہ کی تنخواہیں 3 ہزار سے 7 ہزار روپے تک مقرر کر کے پرھے لکھے مرد خواتین اساتذہ کی مجبوریوں سے ظالمانہ فائدہ اٹھا کر اپنی تجوریاں بھرنے اور اساتذہ سے بیگار لینے کا دھندا جاری ۔حکومت کی طرف سے کم از کم ماہانہ تنخواہ 16000 روپے کے احکامات پر بھی ضلعی انتظامیہ، ڈی ای او اور ڈویژنل ڈائریکٹر عملدرآمد نہ کراسکے۔ میٹرک سے لیکر ایم اے، ایم ایس سی اور ایم فل اساتذہ کی اکثریت سے عملاً پرائیویٹ تعلیمی اداروں میں بیگار لی جانے لگی۔ عوامی حلقوں کا پرائیویٹ سطح پر قائم مقامی اور غیر ملکی تعلیمی اداروں کی قائم برانچز سے حکومتی احکامات پر عملدرآمد، اساتذہ کو تعلیمی قابلیت کے مطابق پے سکیل دینے کے قوانین پر عملدر آمد کا مطالبہ۔

تازہ ترین خبریں